The news is by your side.

وزیراعظم کا 24گھنٹے کے اندر بجلی صارفین کے بلز کم کرنے کا حکم ، اعلیٰ سطحیٰ کمیٹی قائم

اسلام آباد : وزیراعظم شہباز شریف نے 24 گھنٹے میں بجلی صارفین کے بلز کو کم کرنے کا حکم دیتے ہوئے نگرانی کے لئے کمیٹی قائم کردی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت بجلی صارفین کے مسائل کے حل کیلئے اجلاس ہوا ، وزیراعظم نےبجلی صارفین کی شکایات دورکرنے کیلئےاعلیٰ سطح کمیٹی قائم کر دی۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ 200یونٹ تک بجلی صارفین کے بلز میں ریلیف24 گھنٹےمیں شامل کیا جائے اور 24گھنٹے کے اندر ریلیف کے تحت صارفین کے بلز کو کم کیا جائے۔

شہباز شریف نے بجلی کے بلز کی تصحیح کیلئے ڈسکوز کے اسٹاف کو 24 گھنٹے کام کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا بلزکی تصحیح کیلئے اسٹاف کی چھٹیاں ختم کرکے فوری نمٹا کر رپورٹ پیش کی جائے۔

وزیراعظم نے کہا بلز جمع کرانے کیلئےبینکس کو آئندہ دنوں میں کھلا رہنے کی ہدایت کی جائے۔

شہباز شریف نے ریلیف کے اقدامات پر فوری عملدرآمد کو یقینی بنانے کی ہدایات جاری کردی۔

اس سے قبل وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا کہ وزیراعظم نے 24 گھنٹے میں بجلی کی قیمت میں ریلیف کی فراہمی یقینی بنانےکاحکم دیا اور نگرانی کے لئے کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ 200 یونٹ تک وصول فیول چارج ایڈجسٹمنٹ رقم کی واپسی ہوگی اور بلوں کی درستگی کےلئےچھٹی کےدن ڈسکوزاوربینک کھلےرہیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں