The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم نے سحری اور افطار کے وقت بجلی کی لوڈشیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت کردی

اسلام آباد: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے رمضان المبارک کے دوران سحر و افطار کے وقت بجلی کی لوڈشیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت کردی۔

تفصیلات کےمطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت کابینہ کمیٹی برائے توانائی کا ہنگامی اجلاس ہوا جس میں ملک میں بجلی کی طلب اور رسد کی صورت حال کا جائزہ لیا گیا۔

وزیر اعظم کے احکامات پر عمل درآمد کے لیے وزارتِ پانی وبجلی نے ڈسٹری بیوشن کمپنیوں سے طلب اور رسد کی تفصیلات مانگ لی ہیں۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے نماز تراویح کے دوران بھی بجلی کی بلا رکاوٹ فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کردی ہے تاکہ تراویح پڑھنے والوں کو تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

ان کا کہنا تھا کہ تمام ذرائع سے بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جائے، جس کے بعد پاور ڈسٹری بیوشن کمپنیوں نے طلب اور رسد کی تفصیلات جمع کرنا شروع کردی ہیں۔

ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ طلب اور رسد سے متعلق تمام تفصیلات جمع کرکے فوری طور پر وزارتِ پانی و بجلی کو بھجوائے۔

کراچی میں قیامت خیز گرمی، لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کو دہرے عذاب میں مبتلا کر دیا

خیال رہے کہ ملک میں اس وقت 8 سے 12 گھنٹے کی غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن کر رکھی ہے۔ غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے متعلق متعدد عدالتی فیصلے بھی موجود ہیں تاہم اس کے باوجود بجلی فراہم کرنے والے ادارے کی کارکردگی بہتر نہیں بنائی جارہی۔

گزشتہ ہفتے ترجمان پاور ڈویژن کی بریفنگ کے مطابق ملک بھر میں بجلی کا شارٹ فال دو ہزار میگاواٹ سے تجاوز کرچکا ہے۔ تمام پاور  اسٹیشنز سے 16 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی جارہی ہے جب کہ بجلی کی طلب 18 ہزار 109 میگا واٹ تک پہنچ چکی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں