The news is by your side.

وزیراعظم کے صاحبزادے سلیمان شہباز کو دوسرے کیس میں بھی ریلیف مل گیا

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے نیب کو بھی سلیمان شہباز کی گرفتاری سے روکتے ہوئے 13 دسمبر کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کے صاحبزادے سلیمان شہبازکو دوسرے کیس میں بھی ریلیف مل گیا ، اسلام آباد ہائی کورٹ نے نیب کو بھی 13 دسمبر تک سلیمان شہباز کی گرفتاری سے روک دیا۔

چیف جسٹس عامرفاروق اورجسٹس سردار اعجاز اسحاق خان نے سماعت کی، سلیمان شہباز کی جانب سے امجد پرویز ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

وکیل نے کہا کہ حفاظتی ضمانت منظور کی جائے تاکہ لاہور کی احتساب عدالت میں پیش ہوسکیں، جس پر عدالت نے سلیمان شہباز کو حفاظتی ضمانت کے لیے 13 دسمبر کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا عدالت پیش ہونے تک نیب پٹیشنر کو گرفتار نہ کرے، سلیمان شہباز آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں نیب کے ملزم ہیں۔

اس سے قبل اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایف آئی اے کو وزیر اعظم شہباز شریف کے صاحبزادے سلیمان شہباز کی گرفتاری سے روکا تھا اور سلیمان شہباز کو تیرہ دسمبر تک سرنڈر کرنے کا حکم دیا تھا۔

سلمان شہباز کے وکیل امجد پرویز نے موقف اختیار کیا تھا کہ سیلمان شہباز اکتوبر 2018 سے بیرون ملک ہیں اس کے بعد ایف آئی آر ہوئی ،ائیرپورٹ سے عدالت آنے تک سیلمان شہباز کی گرفتاری سے روک دے ، گیارہ دسمبر سعودی ائیر لائن پر سیلمان شہباز پاکستان واپس آئیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں