The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم نے کورونا سے لڑنے اور معیشتوں کی بحالی کیلئے 5 نکاتی ایجنڈے کی تجویز پیش کردی

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے کورونا سے لڑنے اور معیشتوں کی بحالی کیلئے پانچ نکاتی ایجنڈے کی تجویز پیش کرتے ہوئے کہا ہمیں لوگوں کووبا اوربھوک کے ہاتھوں اموات سے بچانا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے پیر کو اقوام متحدہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا دنیا کوصحت عامہ اورمعاشی مسائل کےبحران کا سامنا ہے، کورونا بلا تفریق امیرغریب سب کو متاثر کررہا ہے، کوروناسےپسماندہ ممالک اوران کےعوام سب سےزیادہ متاثرہوئے ، ہمیں لوگوں کووبا اوربھوک کے ہاتھوں اموات سے بچانا ہے۔

وزیراعظم نے پانچ نکاتی ایجنڈے کی تجویز پیش کرتے ہوئے کہا وبا کے خاتمے تک مقروض ممالک کےقرضوں کی واپسی معطل کی جائے، کورونا سے بچاؤ کی ویکسین ترقی یافتہ ممالک میں لگائی جارہی ہے، ترقی پذیرممالک کوویکسین بلاتعطل فراہم کی جائے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ قرضوں کی واپسی میں مقروض ممالک کواضافی رعایت دی جائے اور 5ارب ڈالرکےخصوصی امدادی فنڈکاقیام عمل میں لایاجائے، فنڈ کا مقصد قرضوں کی فراہمی میں سہولت فراہم کرنا ہے۔

انھوں نے کہا کہ کوویڈ19بہت زیادہ پھیلنےوالی بیماری ہے، دنیامیں زندگی بحال کرنے کے لیے عالمی سطح پربڑے اقدامات کی ضرورت ہے، وبا سے بچاؤ کی ہماری حکمت عملی خوش قسمتی سےمؤثرثابت ہوئی، وباکی دوسری لہر پر قابوپانے کے لیے ہمیں مسلسل اقدامات کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پرویکسین کی دستیابی میں ابھی وقت درکارہے، ترقی پذیرممالک وبااورقرضوں کےبوجھ تلےجکڑےہوئےہیں، عالمی سطح پر مالیاتی اداروں کی جانب سےامدادی اقدامات میں اضافہ کیاجائے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ معیشت کی بحالی کےلیےتجویزکردہ اقدامات پرفوری عمل ناگزیرہے، وباکےدوران حوصلہ افزامعاشی نموکوبرقراررکھناہماری ترجیح ہے، وباکی صورتحال میں لاکھوں لوگ خط غربت سےنیچےزندگی گزارنےپرمجبورہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ وبا کی موجودگی تک پائیدار ترقی کاحصول ایک خواب ہے، میں سمجھتا ہوں ہمیں بہت کام کرنےکی ضرورت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں