The news is by your side.

Advertisement

مخالفین کو 2018 کے بعد بھی صبرکرنا ہوگا: وزیراعظم نواز شریف

کوئٹہ: وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے پاناما پیپرز کے معاملے میں خود پر ہونے والی تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ مخالفین 2018 کے انتخابات اور اس سے آگے بھی صبر کریں۔

آج بروز پیر کوئٹہ میں قومی صحت پروگرام کے افتتاح کےموقع پروزیراعظم کا کہناتھا کہ حکومت کے خلاف کرپشن کا ایک بھی الزام نہیں ہے۔ ملک کیسے ترقی کرے گا جب دھرنوں اور امن وامان کی خراب صورتحال کا سلسلہ مسلسل جاری رہے گا۔

وزیراعظم نے اس موقع پر بلوچستان کے 76 ہزار ضرورت مند خاندانوں کے لئے ہیلتھ کارڈز کے اجرا کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ہم سہولیات پر سے اجارہ داری ختم کرنا چاہتے ہیں۔

وزیراعظم نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم انتہائی سخت محنت کررہے ہیں کہ کوئی مافیا قومی مفادات سے نہ کھیل سکے۔

انہوں نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں میں شفافیت کے معاملے میں پاکستان کا نام عالمی سطح پر بہتر ہورہا ہے، گیس اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا 2018 تک خاتمہ ہوجائے گا۔

پاناما پیپرز میں نام آنے سے متعلق ان کا کہنا تھا ’’ہم نے جوڈیشل کمیشن قائم کردیا ہے جو کہ دودھ کا دودھ، پانی کا پانی کردے گا‘‘۔

وزیراعظم نواز شریف نے مزید کہا کہ جس ملک میں احتجاج اور دھرنوں کی سیاست ہوتی ہے وہاں غیر ملکی سرمایہ کاری نہیں آتی۔

انہوں ایک بار پھرسڑکوں کی اہمیت پرزور دیتے ہوئے کہا کہ ان سے قبل کسی بھی حکومت نے سڑکوں کی اہمیت کو نہیں سمجھا، پاکستانیوں میں فاصلے اتنے نہ ہوتے اگر وہ موٹرویز جو آج تعمیر ہورہے ہیں اگر50 سال قبل تعمیر ہوجاتے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں