The news is by your side.

Advertisement

’وزیراعظم چاہتے ہیں کاروباری سرگرمیوں کو حکمت عملی کے ساتھ جاری رکھا جائے‘

کراچی: گورنر سندھ عمران اسماعیل سے آل پاکستان انجمن تاجران سندھ کے وفد نے ملاقات کی، اس دوران لاک ڈاؤن کے باعث تاجروں کی مشکلات سمیت کاروبار کھولنے سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گورنر سندھ سے تاجر وفد کی اہم ملاقات کے دوران تاجروں کو مشکلات اور کاروبار شروع کرنے کی اجازت سمیت دیگر امور پر گفتگو ہوئی۔ اس موقع پر عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ کروناوائرس عالمی وبابن چکی ہے، پاکستان بھی شدید متاثر ہورہا ہے، مجبوری میں سخت فیصلے کرنا پڑے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو عام آدمی کا احساس ہے، ایک طرف کرونا تو دوسری جانب غربت و افلاس ہے، وزیراعظم چاہتے ہیں کاروباری سرگرمیوں کو حکمت عملی کے ساتھ جاری رکھا جائے۔

آئندہ ہفتے تک کاروبار کھل جائے گا: تاجر اتحاد

گورنر نے تاجر برادری سے مطالبہ کیا کہ آپ مختلف شعبوں کے لیے احتیاطی تدابیر پر مشتمل ایس او پی بنا کر دیں۔ دریں اثنا تاجر رہنما جاوید قریشی نے کہا کہ لاک ڈاؤن سے معاشی دشواریوں کا سامنا ہے۔

خیال رہے کہ سندھ بالخصوص کراچی میں کاروبار کھولنے سے متعلق تاجر برادری حکومتی وفد سے ملاقات بھی کرچکی ہے۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ ممکنہ طور پر آئندہ ہفتے سے احتیاطی تدابیر اپناتے ہوئے محدود پیمانے پر کاروبار کا آغاز کریں گے۔ تاہم اس حوالے سے کوئی حتمی اعلان سامنے نہیں آیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں