The news is by your side.

Advertisement

پنجاب میں حکومت سازی کے لیے جوڑ توڑ جاری، شہباز شریف کی پیپلز پارٹی رہنما سے ملاقات

لاہور: پنجاب میں حکومت سازی کے لیے مسلم لیگ ن کی جوڑ توڑ جاری ہے، ن لیگ کے صدر شہباز شریف نے اس سلسلے میں پیپلز پارٹی کے رہنما مخدوم احمد محمود سے ملاقات کی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف اور سابق گورنر مخدوم احمد محمود کی ملاقات اسلام آباد میں ہوئی، ملاقات میں شہباز شریف نے پی پی کو مل کر حکومت بنانے کی پیش کش کی۔

دوسری طرف ن لیگی صدر نے پی پی کے سینئر رہنما خورشید شاہ سے بھی ٹیلی فونک رابطہ کیا ہے، شہباز شریف نے پی پی کی قیادت سے ملاقات کی ہامی بھرلی۔

دونوں رہنماؤں نے متحدہ مجلس عمل سے رابطوں پر اتفاق کیا، پی پی اور ن لیگ کے رہنما آج ملاقات کریں گے، اسفندیار ولی، آفتاب شیرپاؤ سے بھی رابطوں کا فیصلہ کیا گیا، خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کی کمیٹی تمام اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کرے گی۔

ذرائع کے مطابق میاں شہباز شریف اور خورشید شاہ کے درمیان آج اسلام آباد میں ملاقات متوقع ہے، ملاقات میں مشترکہ حکومت یا اپوزیشن بننے پر تبادلہ خیال کیاجائےگا۔

ن لیگ کا ق لیگ سے بھی رابطہ


دریں اثنا تختِ لاہورکی حکمرانی کے لیے جاری جوڑ توڑ میں ن لیگ نے ق لیگ سے بھی رابطہ کر لیا ہے، ن لیگ نے ق لیگ سے پنجاب میں حکومت بنانے کے لیے تعاون کی درخواست کر لی۔

ن لیگ نے تختِ لاہور کو قبضے میں کرنے کے لیے آخری کوشش بھی کرلی، ذرائع کے مطابق ن لیگی رہنما سردار ایاز صادق نے چوہدری پرویزالٰہی سے ملاقات کا وقت مانگ لیا ہے۔

پی ٹی آئی وفاق کے بعد پنجاب میں بھی حکومت بنانے کی پوزیشن میں آگئی

ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ کے رہنما سابق اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق دیگر اپوزیشن جماعتوں سے بھی رابطے کریں گے اور حلف اٹھانے پر قائل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریکِ انصاف کی طرف سے بھی پنجاب میں حکومت سازی کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، اس سلسلے میں پنجاب بھر کے آزاد امیدواروں سے رابطے بھی شروع کر دیے گئے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں