The news is by your side.

Advertisement

مسلم لیگ ن نے وزیر اعظم کے اعتماد کا ووٹ لینے کا اقدام غیرآئینی قرار دے دیا

لاہور : مسلم لیگ ن نے وزیر اعظم کے اعتماد کا ووٹ لینے کا اقدام غیرآئینی قرار دے دیا اور کہا آرٹیکل91 کے تحت کل ہونیوالا قومی اسمبلی اجلاس غیر قانونی ہے۔

تفصیلات کے مطابق رکن پنجاب اسمبلی خلیل طاہرسندھو نے وزیر اعظم کے اعتماد کا ووٹ لینے کے اقدام کو غیر آئینی قرار دیتے ہوئے کہاصدرلکھیں کہ وزیراعظم ایوان کااعتمادکھوبیٹھےہیں توووٹ لیاجاسکتا، وزیراعظم نے اجلاس بلایا ہے وہ آئین کےمطابق غیرقانونی ہے، آرٹیکل91کےتحت کل ہونیوالاقومی اسمبلی اجلاس غیرقانونی ہے۔

یاد رہے صدرمملکت نے قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس ہفتے کی دوپہر طلب کرلیا ہے ، جس میں وزیراعظم عمران خان اعتماد کا ووٹ لیں گے۔

قومی اسمبلی 341 کے ایوان میں حکومت کو 181ارکان پارلیمنٹ کی حمایت حاصل ہے، اعتماد کے ووٹ میں کامیابی کیلئے وزیراعظم عمران خان کو 172 ارکان کی حمایت درکار ہوگی، اعتماد کے ووٹ کے لیے اوپن بیلیٹنگ ہوگی۔ڈویژن کے ذریعے وزیراعظم اعتماد کا ووٹ حاصل کریں گے۔

گذشتہ روز قوم سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان نے سینیٹ انتخابات میں شفافیت برقرار نہ رکھنے پر الیکشن کمیشن کی کارکردگی پر سوالات اٹھائے اور شو آف ہینڈ کے ذریعے قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اگر اراکین نے عدم اعتماد کیا تو اپوزیشن بینچ پر بیٹھ جاؤں گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں