جس دن سے پی ٹی آئی حکومت آئی ہے 10 لاکھ لوگ بےروزگار ہوگئے ہیں ،محسن رانجھا
The news is by your side.

Advertisement

جس دن سے پی ٹی آئی حکومت آئی ہے 10 لاکھ لوگ بےروزگار ہوگئے ہیں ،محسن رانجھا

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے رہنما محسن رانجھا کا کہنا ہے کہ جس دن سے پی ٹی آئی حکومت آئی ہے 10 لاکھ لوگ بےروزگار ہو گئے، وزیراعظم نے کہا تھاقرضہ لینے سے بہتر ہے خودکشی کرلوں، اب حکومت آئی ایم ایف کے پاس جانے کی تیاری کر رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما محسن رانجھا نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ منی بجٹ سے لگتا ہے حکومت نے وعدوں سے یوٹرن لیا ہے، پی ٹی آئی حکومت نے اپنے منشور میں ایک نہیں 6 یوٹرنز لئے ہیں۔

محسن رانجھا کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے منشور میں کہا تھا ان ڈائریکٹ ٹیکس کو ختم کرے گی، حکومت نے منی بجٹ میں 183ارب کے ان ڈائریکٹ ٹیکس لگائے، ایک کروڑ نوکریاں دیں گے مگر ڈیولپمنٹ بجٹ میں کمی کی گئی۔

رہنما مسلم لیگ ن نے کہا جس دن سے یہ حکومت آئی ہے 10 لاکھ لوگ بےروزگار ہو گئے، وزیراعظم نے کہا تھاقرضہ لینے سے بہتر ہے خودکشی کرلوں، حکومت اب آئی ایم ایف کے پاس جانے کی تیاری کر رہی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت نے نان فائلرز کو چھوٹ دے دی، ایف بی آر میں اصلاحات کا کوئی ذکر نہیں۔

محسن رانجھا نے کہا ایک کروڑ نوکریاں دینے کے دعویدار لوگوں کو نکال رہے ہیں، ترقیاتی بجٹ میں کمی سے 20 لاکھ لوگ بیروزگار ہوجائیں گے۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کے رہنماایاز صادق نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ وزارت توانائی کے دو ڈویژن ہیں، ڈویژن کا وفاقی وزیر نہیں ہو سکتا، غلام سروراور عمر ایوب میں سے کوئی ایک غیر قانونی ہے۔

جس پر پی ٹی آئی رہنما علی محمد خان کا کہنا تھا کہ وزارت قانون اورکابینہ ڈویژن سے رائے مانگی ہے، رائے کے بعد ضرورت ہوئی تونیانوٹی فکیشن جاری کیا جائے گا۔

ایاز صادق نے کہا علی محمد خان کےبیان کے بعد ثابت ہوگیا ایک ضرور غیرقانونی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں