site
stats
پاکستان

پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا کو لیگی رہنماؤں کی دھمکیاں

اسلام آباد : حکومت نے عدلیہ اور نیب کے بعد پاناما جے آئی ٹی کے خلاف بھی محاذ کھول دیا اور پانامہ کیس میں بنائی گئی جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا کو لیگی رہنماؤں کی جانب سے دھمکیاں دی جارہی ہے۔

لیگی رہنماؤں نے عدلیہ اور نیب کے بعد پاناما جے آئی ٹی کو نشانے پر لے لیا، پانامہ کیس میں بنائی گئی جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا پر نااہل وزیر اعظم کے داماد کیپٹین(ر) صفدر نے شدید تنقید کی۔

نوازشریف کےدامادریٹائرڈ کیپٹن صفدر نے واجد ضیا کی قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی میں طلبی کیلئے کمیٹی میں تحریک استحقاق جمع کرائی ہے، کیپٹن صفدر نے تحریک استحقاق میں کہا ہے کہ واجد ضیا نے ان پر بے بنیاد الزامات لگائے، ان کا استحقاق مجروح ہوا، بے بنیاد الزامات پر جے آئی ٹی سربراہ کو بلایا جائے۔

واجد ضیاء کو دو فروری کی صبح ساڑھے دس بجے بلا کر بازپرس کی جائے، جے آئی ٹی نے کیپٹن صفدر کو پندرہ سو ریال جیب خرچ ملنے کا انکشاف کیا تھا۔

واجد ضیا کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی میں طلب کیا جائے گا ، قومی اسمبلی کی کمیٹی میں طلبی کا ایجنڈا تیار کرلیا گیا نیٹ طلبی کیپٹن صفدر تحریک استحقاق پر ہوگی۔


مزید پڑھیں : آمدن سےزائد اثاثہ جات ریفرنس کیس، جےآئی ٹی سربراہ واجدضیاآج بطور گواہ پیش نہ ہوئے


دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈارکا کہنا ہے کہ نون لیگی رہنماؤں کی واجد ضیاء کودھمکیاں سسیلین مافیا کی واضح نشانی ہے، ن لیگی جے آئی ٹی پر اثڑ انداز ہونےکی کوشش کرتے رہے، نیب کورٹ پر اثرا نداز ہونے کے لیے ڈرامہ رچایا جارہا ہے۔

سینیٹر مرتضیٰ وہاب نے اےآروائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا جے آئی ٹی سربراہ کو دھمکیاں دینا اچھی بات نہیں۔

سابق اٹارنی جنرل شاہ خاور کا کہنا ہے کہ چیئرمین نیب دھمکیاں دینے والے کی گرفتاری کا حکم دیں، واجد ضیاءکودھمکیاں عدالت کے واضح حکم کی خلاف ورزی ہے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top