لوگوں کو اکسانے پر مسلم لیگی قیادت کو نظر بند کرنے کے احکامات جاری
The news is by your side.

Advertisement

لوگوں کو اکسانے پر مسلم لیگی قیادت کو نظر بند کرنے کے احکامات جاری

لاہور : آئی جی پنجاب پولیس نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کی نظر بندی کے احکامات جاری کر دیئے ہیں، نگراں پنجاب حکومت نے مسلم لیگی قیادت کو لوگوں کو اکسانے پر نظر بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق سزایافتہ نواز شریف اور مریم نواز کی لاہور آمد کے موقع پر شہر بھر میں سیکیورٹی ہائی الرٹ ہے اور شہر کی اہم شاہراہوں کو کنٹینرز لگا کر بند کردیا گیا ہے۔

نگران پنجاب حکومت نے مسلم لیگی قیادت کو لوگوں کو اکسانے پر نظر بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ،پولیس اہلکار اعلی افسران کے حکم کے منتظر ہیں اور حکم ملتے ہی لیگی رہنماؤں کو نظر بند کیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نظر بندی سے بچنے کے لیے لیگی رہنماروپوش ہوگئے۔

آئی جی پنجاب پولیس کلیم امام نے  مسلم لیگ (ن) کے 7 رہنماؤں کی نظر بندی کے احکامات جاری کر دیئے ہیں، جن میں  خواجہ سعد رفیق، میاں مرغوب، بلال یاسین، خواجہ عمران نذیر، خواجہ سلمان رفیق، ملک سیف الملوک اور وحید عالم خان شامل ہیں۔

یاد رہے گذشتہ روز ن لیگی قیادت نے نگراں حکومت کو کھلم کھلادھمکیاں دی تھی ، شہباز شریف کا کہنا تھا کہ کارکنوں کو گرفتار کرنے والے کالی کوٹھری میں جائیں گے۔

سعدرفیق کا کہنا تھا کہ گرفتار کرنے والے نتائج بھگتنے کو تیار رہیں جبکہ ایاز صادق نے کہا خبردارکررہا ہوں یہ سب نہ کریں۔

خیال رہے کہ ایوان فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ نواز شریف اور مریم نواز آج وطن واپس پہنچ رہے ہیں ، نیب نے دونوں کی گرفتاری کی تیاریاں مکمل کرلی ہیں،وزارت داخلہ نے نیب ٹیم کو ایپرن تک جانے کی اجازت دے دی ہیں۔

نیب افسران خود نواز شریف اور مریم نواز کی امیگریشن کرائیں گے اور ہوائی اڈے پر ہی گرفتاری کے بعد ہیلی کاپٹر کے ذریعے اڈیالہ جیل پہنچایا جائے گا تاہم مچھ جیل اور دیگر جیلوں میں منتقلی کے آپشنز بھی زیرغور ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک’پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں