The news is by your side.

Advertisement

این اے 63 اور پی پی 232 کے ضمنی انتخاب،مسلم لیگ ن کے امیدوار کامیاب

جہلم / وہاڑی: قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 63 اور پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 232 کے ضمنی انتخاب میں غیر سرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے امیدواروں نے تحریک انصاف کو شکست دے دی.

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 63 جہلم کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے امیدوار راجہ مطلوب
مہدی نے 82 ہزار 896 ووٹ حاصل کیے جبکہ ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے امیدوار فواد چوہدری نے 74 ہزار 77 ووٹ حاصل کیے اور یوں انہیں 8 ہزار 77 ووٹوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا.

دوسری جانب پنجاب اسمبلی کے حلقہ این اے 323 کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے امیدوار یوسف کسیلیہ نے 51 ہزار 323 ووٹ لے کر میدان مار لیا جبکہ تحریک انصاف کی امیدوار عائشہ نذیر نے 50 ہزار 267 ووٹ حاصل کیے اور انہیں ایک ہزار 56 ووٹوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا.

*اسلام آباد: الیکشن کمیشن کا حمزہ شہباز کو شوکازنوٹس

یاد رہے کہ گزشتہ روز این اے 63 اور پی پی 232 ویہاڑی میں ضمنی انتخابات کے لیے پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو بلاتعطل شام 5 بجے تک جاری رہا.

این اے 63 جہلم میں4 لاکھ 27 ہزار 757 رجسٹرڈ ووٹرز کے لیے 314 پولنگ اسٹیشنز اور 974 پولنگ بوتھز قائم کیےگئے.

*جہلم : انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پرعمران خان کی طلبی

الیکشن کمیشن کی جانب سے حلقے میں 39 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس اور 31 کو حساس قرار دیا گیا،کسی بھی نا خوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لئے پولیس اور پاک فوج کے جوانوں کو تعینات کیاگیا،پاک فوج کے جوان پولنگ اسٹیشنز کے اندر اور باہر تعینات رہے.

پنجاب اسمبلی کی نشست پی پی 232 ویہاڑی میں ایک لاکھ 91 ہزار 92 ووٹرز کے لئے 157 پولنگ اسٹیشنز قائم کئے گئے،حلقے میں 31 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس اور 48 کو حساس قرار دیا گیا جب کہ پولیس اور پاک فوج کے جوان سیکیورٹی کے فرائض انجام دیا.

واضح رہے کہ جہلم سے ن لیگ کے کن قومی اسمبلی اقبال مہدی کے انتقال کے باعث خالی ہونے والی نشست پر مسلم لیگ ن نے ان کے بیٹے کوتحریک انصاف کےامیدوارفواد چودھری کے خلاف میدان میں اتارا تھا.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں