The news is by your side.

Advertisement

ن لیگ کا دعویٰ غلط ثابت، شہزاد اکبر اے آروائی نیوز اسٹوڈیو پہنچ گئے

مسلم لیگ ن نے دعویٰ کیا تھا کہ شہزاد اکبر ملک چھوڑ کر جاچکے لیکن شہزاد اکبر نے اے آر وائی نیوز اسٹوڈیو پہنچ کر ن لیگ کے دعوے کی نفی کردی۔

ن لیگ پنجاب کی ترجمان عظمیٰ بخاری نے آج ہی نیوز کانفرنس کرکے دعویٰ کیا تھا کہ پی ٹی آئی رہنما ملک سے جاچکے ہیں اور کسی کے سامنے نہیں آرہے ہیں۔

انہوں نے مطالبہ کیا تھا کہ پی ٹی آئی کے باقی رہنماؤں کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں تاکہ وہ ملک سے باہر نہ جاسکیں۔

لیکن پی ٹی آئی رہنما اور وزیراعظم کے سابق مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر نے اے آر وائی نیوز کے اسلام آباد اسٹوڈیو پہنچ کر ن لیگ کے اس دعوے کی نفی کردی۔

شہزاد اکبر نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کےترجمانوں کو پتا نہیں کیا پریشانی ہے،یہ لوگ کل سے خبریں چلا رہے ہیں کہ میں ملک میں نہیں، کل ایک چینل نے بھی میرے متعلق خبر چلائی، شاید مسلم لیگ ن کو مجھ سے کچھ زیادہ ہی محبت ہے۔

 

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ میرا اوڑھنا بچھونا پاکستان میں ہے، یہ لوگ اپنی چوری کوچھپانے کےلیے ایسی باتیں کررہے ہیں، اپوزیشن کو صرف عمران خان کی ذات سے اختلاف ہے کیونکہ وزیراعظم نے ان کو ایکسپوز کردیا ہے، اپوزیشن اس وقت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ اتحادی حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں، پی ٹی آئی کی کوشش ہے کہ جلد سے جلد غیر یقینی صورتحال کا خاتمہ ہو،اپوزیشن کو خود بھی تحریک عدم اعتماد کی کامیابی پر اعتماد نہیں ہے اگر اسے اعتماد ہوتا تو اسمبلی پر دھرنا دیے بیٹھی ہوتی۔

شہزاد اکبر نے کہا کہ میں تو بڑی خاموشی سے اپنی چھٹیاں گزار رہا تھا لیکن ن لیگ کی مریم اورنگزیب اور عظمیٰ بخاری نے مجبور کیا تو اسٹوڈیو آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ عظمیٰ بخاری کی تسلی کیلیے میں اس وقت یہاں موجود ہوں اگر وہ چاہیں تو اے آر وائی نیوز اسٹوڈیو آکر مجھے یہاں دیکھ کر اپنی تسلی کرلیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ ن پنجاب کی ترجمان عظمیٰ بخاری نے دعویٰ کیا تھا کہ پی ٹی آئی رہنما شہزاد اکبر ملک چھوڑ کر جاچکے ہیں، ساتھ ہی انہوں نے مطالبہ بھی کیا تھا کہ پی ٹی آئی کے تمام رہنماؤں کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں تاکہ وہ ملک سے فرار نہ ہوسکیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں