The news is by your side.

Advertisement

پارٹی سے اختلافات، مسلم لیگ ن کے دو اراکین اسمبلی کا پارٹی سے اعلان لاتعلقی

لاہور: مسلم لیگ ن کے دو اراکین اسمبلی نے اختلافات کی بنیاد پر  پارٹی قیادت سے علیحدگی کا اعلان کردیا، رکن صوبائی اسمبلی طارق باجوہ نے آئندہ انتخابات میں آزاد حیثیت سے الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تو رکن اسمبلی فرزانہ بٹ سے سیاست سے علیحدگی اختیار کرلی۔

تفصیلات کے مطابق سابق نااہل وزیراعظم نوازشریف کے ملک مخالف بیان کے بعد مسلم لیگ ن کی مشکلات تھمنے کا نام نہیں لے رہیں، متعدد اراکین اسمبلی نے پارٹی کو خیرباد کہہ کر دیگر جماعتوں میں شمولیت اختیار کرلی تو کچھ نے آئندہ انتخابات میں آزاد حیثیت سے انتخابات لڑنے کا اعلان کردیا۔

مسلم لیگ ن کے رکن صوبائی اسمبلی طارق باجوہ نے پارٹی قیادت کی پالیسیوں اور رویے پر سخت ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے آئندہ انتخابات میں آزاد حیثیت سے الیکشن لڑنے کا اعلان کردیا۔

مزید پڑھیں: پاکستان تحریک انصاف نے ن لیگ کی مزید 3 وکٹیں گرا دیں

اُن کا کہنا تھا کہ اگر مسلم لیگ ن نے قومی اسمبلی کا ٹکٹ دیا تو اسی پلیٹ فارم سے انتخاب لڑوں گا اور اگر پارٹی قیادت نے حلقے سے برجیس طاہر کے علاوہ کسی کو بھی ٹکٹ دیا تو اُس کی مکمل حمایت کریں گے۔

دوسری جانب رکن صوبائی اسمبلی فرزانہ بٹ نے بھی پارٹی کی حالیہ پالیسیوں سے اختلافات کے باعث سیاست سے علیحدگی کا فیصلہ کرتے ہوئے اعلان کیا کہ قیادت سے گلے شکوے تھے جنہیں دور نہیں کیا گیا، اگر کارکن کو قربانیوں کا صلہ نہ ملے تو پھر دل ٹوٹ جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: مسلم لیگ ن کے رکن قومی و صوبائی اسمبلی تحریک انصاف میں شامل

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں سابق وزیراعظم نے نجی اخبار کے صحافی کو انٹرویو دیتے ہوئے ممبئی حملوں سے متعلق ملک مخالف مؤقف اختیار کیا تھا جس کے بعد مسلم لیگ ن کے اراکین اور ملک کی تمام ہی سیاسی و مذہبی جماعتوں نے نوازشریف کے بیان کو ملک دشمنی قرار دیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں