The news is by your side.

Advertisement

ن لیگ طاقت کا مظاہرہ کرنے کے لیے گلوبٹ تیار کررہی ہے، عمران خان

اسلام آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا ہے کہ ن لیگ طاقت کا مظاہرہ کرنے کے لیے گلوبٹ تیار کررہی ہے، جے آئی ٹی  اور سپریم کورٹ کو یقین دلاتے ہیں کہ قوم اُن کے پیچھے کھڑی ہے، تحریک انصاف نے جے آئی ٹی کی کارروائی پبلک کرنے اور تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے کے خلاف دو درخواستیں سپریم کورٹ میں جمع کروانے کی تیاری کرلی۔

تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ آخر کار طاقتور قانون کے دائرے میں آرہے ہیں جو پاکستان کے لیے اچھی علامت ہے تاہم ن لیگ کے گلو بٹ اپنے آقا کو بچانے کی کوشش کررہے ہیں جس کی اجازت نہیں دیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ پہلےہی لیگی حکمران جے آئی ٹی کو دھمکیاں دے رہا ہے جو قابل مذمت ہے، پاناما کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

پڑھیں: تحریک انصاف کی جے آئی ٹی کی رپورٹ پبلک کرنے کے لیے درخواست

دوسری جانب پی ٹی آئی نے جے آئی ٹی کی رپورٹ پبلک کرنے کیلئے درخواست تیارکرلی، درخواست میں جے آئی ٹی کی تحقیقاتی رپورٹس پبلک کرنے کی استدعا کے ساتھ اس کی کارروائی کھلے عام کرنے کا مطابلہ کیا جائے گا۔

تحریک انصاف کی درخواستیں

تحریک انصاف نے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ کو خفیہ رکھے جانے سے شکوک و شبہات پیدا ہورہے ہیں، شفافیت کا تقاضہ ہے کہ کارروائی منظر عام پر لائی جائے، تحریک انصاف نے آج سپریم کورٹ میں درخواست جمع کروانے کی کوشش کی تاہم آج وقت نہ ہونے کی وجہ سے درخواست جمع نہیں کروائی جاسکی جس کے بعد اب درخواست کل صبح 9 بجے دائر کی جائے گی۔

پی ٹی آئی کی جانب سے ایک اور درخواست سپریم کورٹ میں دائر کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس میں جے آئی ٹی کو بدنام کرنے اور تحقیقات میں رکاوٹیں ڈالنے کے تذکرہ کیا گیاہے، درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ نوازشریف اور اسحاق ڈار پاناما تحقیقات میں رکاوٹ بن رہے ہیں، وزیراعظم نے عدلیہ اور جے آئی ٹی کے خلاف مہم جاری رکھی ہوئی ہے جبکہ لیگی ترجمان جے آئی اراکین اور ججز کے خاندان کو دھمکیاں دے رہے ہیں۔ درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ نوازشریف اور اسحاق ڈار کو پاناما تفتیش میں رکاوٹ بننے سے روکا جائے۔

یاد رہے سپریم کورٹ کے احکامات پر پاناما لیکس کی تحقیقات کے لیےجے آئی ٹی (جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم) تشکیل دی گئی ہے، جس میں آئی ایس آئی، ایم آئی، نیب، اسٹیٹ بینک، ایس ای سی پی سمیت دیگر ادارے شریک ہیں۔

جے آئی ٹی میں اب تک حسین نواز چار بار جبکہ حسن نواز ایک بار پیش ہوچکے ہیں، پاناما کی تحقیقات کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے جے آئی ٹی نے 15 جون کے روز وزیراعظم کو بھی طلب کررکھا ہے جبکہ امکان ہے کہ آئندہ ہفتے میں وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو بھی طلب کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں