The news is by your side.

Advertisement

کنٹونمنٹ کے کرایوں میں اضافے کے خلاف احتجاج، لیگی ذمہ داران کے خلاف مقدمہ درج

ابیٹ آباد : تاجر رہنماء ممتاز خان کے گھر کو غیر قانونی طور پر سیل کرنے کے خلاف احتجاج کرنے والے لیگی ضلع کونسل کے ممبر ندیم مغل کو تھانہ کینٹ پولیس نے گرفتار کرلیا جبکہ تحصیل نائب ناظم کی گرفتاری کےلیے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق کنٹونمنٹ ایگزیکٹو افسر سید فراست علی شاہ نے کینٹ پلازہ کے بڑھتے ہوئے کرایوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کرنے والے تاجر رہنماء ممتاز خان کے گھر کو سیل کرتے ہوئے اہل خانہ کو گھر سے باہر نکال دیا۔

 پڑھیں : ایبٹ آباد : اسامہ بن لادن کی رہائش گاہ کو قبرستان بنانے کا فیصلہ

گزشتہ رات تاجر برادری نے شاہراہ ریشم پر سڑک بند کر کے ایگزیکٹو آفیسر اور پولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا، تاجر برادری سے حمایت کے لیے مسلم لیگ ن سٹی اربن کے ممبر کونسل ندیم مغل اور تحصیل نائب ناظم سردار شجاع احمد نے احتجاجی مظاہرے میں شرکت کی۔

لیگی ذمہ داران نے کینٹ آفیسر کے اس اقدام کو ظلم قرار دیتے ہوئے کہا کہ ’’ظلم کے خلاف آواز اٹھانے والے افراد کو پولیس کی طاقت سے دبایا جارہا ہے جو غیرقانونی عمل ہے‘‘۔

مزید پڑھیں : خیبرپختوانخواہ میں ’ایم پی اے‘ اپنے گھر کے لیے لوگوں کو بے گھرکررہا ہے

کنٹونمنٹ ایگزیکٹو آفیسر نے لیگی رہنماؤں کے خلاف تھانہ کینٹ میں مقدمے کے اندارج کے لیے درخواست دائر کروائی جس کے بعد پولیس نے فوارہ چوک بند کرنے اور ہنگامہ آرائی کے الزام میں حکمراں جماعت کے ممبر ضلع کونسل ندیم مغل کو علی الصبح اُن کے گھر سے گرفتار کرلیا جبکہ تحصیل نائب ناظم سردار شجاع احمد کے خلاف بھی مقدمہ درج کرکے گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

پولیس حکام نے کہا ہے کہ ’’ملزمان کے خلاف ایف آئی آر کا اندارج کرلیا گیا ہے جس میں جلاؤ گھیراؤ کی دفعات لگائی گئی ہیں، دونوں ملزمان کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں