The news is by your side.

Advertisement

شوکت خانم کے نام پر چندہ جمع کر کے آف شور کمپنیاں بنائی گئیں، لیگی رہنماء

اسلام آباد: مسلم لیگ کے رہنماء و رکن قومی اسمبلی  نے کہا ہے کہ شوکت خانم اسپتال کے نام پر چندہ جمع کر کے سرمایہ کاری کی گئی اور اُس سے آف شور کمپنیاں بنائی گئیں  جس کی آڈٹ رپورٹ سامنے آچکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مسلم لیگ کے رہنماء دانیال عزیز نے کہا کہ فلاحی اسپتال کے نام پر چندہ جمع کر کے سرمایہ کاری کی گئی جس کے واضح ثبوت قوم کے سامنے آچکے ہیں اگر عمران خان نے چوری نہیں کی تو وہ تلاشی دے دیں۔

پڑھیں:  حکومت نے دھرنا روکا تو ذمہ دار خود ہو گی،عمران خان

 انہوں نے مزید کہا کہ شوکت خانم کی 2015 میں ہونے والے آڈٹ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ خیراتی رقم اسپتال کے نام پر حاصل کی گئی اور اُس سے کمپنیاں بنائی گئیں تاہم اگر عمران خان نے رقم کاروبار پر نہیں لگائی تو وہ خوف زدہ کیوں ہیں؟‘‘۔

دانیال عزیزنے کہا کہ عمران خان کے اردگرد موجود افراد بھی آف شور کمپنیوں کے مالک ہیں، جہانگیر ترین بھی ایسی ہی ایک کمپنی رکھتے ہیں وہ بھی تلاشی دیں۔ اُن کا مزید کہنا تھا کہ ٹی او آرز سے متعلق حکومت نے اسمبلی میں بل پیش کیا ہوا ہے مگر وہ چیئرمین تحریک انصاف کی وجہ سے تعطل کا شکار ہوگیا ہے۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم اورعمران خان جمہوریت کیلئے خطرہ ہیں،خورشید شاہ

 لیگی رہنماء محمد زبیر نے کہا کہ حکومت نے پاناما لیکس کی تحقیقات کے لیے سپریم کورٹ کو خط لکھا مگر اداروں کو الزام تراشی کر کے ملک کا مذاق بنایا جارہا ہے ، جو قابلِ افسوس ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’’آئین میں کسی جگہ گنجائش نہیں کہ سرکاری دفاتر بند کروائے جائیں، حکومت نے تحریک انصاف کے چیئرمین کو مرضی کا تحقیقاتی افسر مقرر کرنے کی آفر بھی کی مگر افسو س کے عمران خان ماضی کی ساری باتیں بھول جاتے ہیں‘‘۔

یہ بھی پڑھیں:  دو نومبر کو انسانوں کا سمندر اکھٹا ہوگا،عمران خان

 یاد رہے تحریک انصاف کی جانب سے پاناما لیکس کی تحقیقات اور کرپشن کے خلاف 2 نومبر کو اسلام آباد بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے، عمران خان نے اس عزم کا اظہار بھی کیا ہے کہ جب تک وزیر اعظم استعفیٰ نہیں دیتے وفاقی دارلحکومت کو بند رکھا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں