The news is by your side.

Advertisement

مسلم لیگ ن کے مزید اراکین اسمبلی تحریک انصاف میں شمولیت کریں گے، ناراض رکن اسمبلی کی تصدیق

لاہور: مسلم لیگ ن کے ناراض رکن پارلیمنٹ یونس انصاری نے اراکین اسمبلی کی وزیراعظم سے ملاقات کی تصدیق کرتے ہوئے نام ظاہر کرنے سے معذرت کرلی البتہ انہوں نے عندیہ دیا ہے کہ مستقبل میں قومی و صوبائی اسمبلی کے مزید اراکین تحریک انصاف میں شمولیت کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایک روز قبل وزیر اعظم عمران خان سے مسلم لیگ ن کے اراکین نے بنی گالہ میں ملاقات کی اور تحریک انصاف کی پالیسیوں پر اعتماد کا اظہار بھی کیا۔ مسلم لیگ ن کے ناراض اراکین اسمبلی کے وفد کی قیادت رکن قومی اسمبلی یونس انصاری نے کی۔ انہوں نے بتایا کہ ملاقات میں پنجاب اسمبلی کے 15اور قومی اسمبلی کے 5 ارکان شریک تھے۔

یونس انصاری کا کہنا تھا کہ سندھ سے بھی مسلم لیگ ن لیگ سمیت دیگرجماعتوں کی لوگ پی ٹی آئی میں شامل ہوں گے، ن لیگ میں واپسی کےلیے اقبال گجر نے بھی رابطہ کیا تھا البتہ ہم نے معذرت کرلی۔رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کا مڈٹرم انتخابات کا مطالبہ ان کا سیاسی دیوالیہ پن ہے۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم سے ملاقات کرنے والے لیگی اراکین اسمبلی کے نام سامنے آگئے

اُن کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز بنی گالہ میں ملاقات کرنے والے ارکان اسمبلی کے نام نہیں بتا سکتا کیونکہ مسلم لیگ ن اور ساتھیوں سے میری وابستگی 33 سال پرانی ہے البتہ تمام نام جلد ہی سامنے آجائیں گے۔ یونس انصاری کا کہنا تھا کہ 2018 کا الیکشن قومی اسمبلی کے حلقے این اے 82 گونجرنوالہ سے آزاد حیثیت سے لڑا جبکہ بھائی اشرف انصاری ن لیگ کےٹکٹ پر پنجاب اسمبلی کا رکن منتخب ہوا۔

اُن کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں صرف عمران خان ملک کومسائل سےنکال سکتےہیں، شریف خاندان کی سیاست ہمیشہ کے لیے ختم ہو چکی ہے، 4ماہ سے وزیر اعلٰی عثمان بزدار سے رابطے میں ہوں، انہوں نے علاقے کے مسائل حل کرانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

پندرہ لوگ وفاداریاں تبدیل کرچکے ہیں، احسن اقبال

دوسری جانب مسلم لیگ ن کے صدر اور سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ 15لوگ وہ ہیں جوسیاسی وفاداریاں2018میں تبدیل کرچکےتھے، 5کےقریب اراکین کی وفاداریاں تبدیل کرنے کی مصدقہ اطلاعات ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ وفاداریاں تبدیل کرنےوالےسیاسی ڈیتھ وارنٹ پردستخط کریں گے کیونکہ حکومتی کارکردگی سب کے سامنے ہے،  عمران خان آئی ایم ایف کے سامنے سرینڈر ہو گئے اور آج مہنگائی زیادہ ہوگئی۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کا بیانہ ایک ہی ہے اور وہ نوازشریف ہے، مسلم لیگ کے اندر کوئی تقسیم نہیں ہے البتہ حکمراں جماعت اپنی سیاست کو زندگہ رکھنے کے لیے ہارس ٹریڈنگ کی روایت کو دوبارہ زندہ کررہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں