The news is by your side.

Advertisement

الیکشن کمیشن کے رویے سے افسوس ہوا، چیف الیکشن کمشنراستعفیٰ دیں: ن لیگ کا مطالبہ

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما ایاز صادق نے چیف الیکشن کمشنر جسٹس ریٹائرڈ سردار رضا استعفے کا مطالبہ کر دیا۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے الیکشن کمیشن حکام سے ملاقات کے بعد کی۔ پریس کانفرنس میں ن لیگی قائدین ایازصادق، شاہد خاقان، مریم اورنگزیب کی نے چیف الیکشن کمشنر پر سنگین الزامات عائد کیے۔

ایاز صادق کا کہنا تھا کہ بار ایسا ہوا ہے کہ 24 گھنٹے تک رزلٹ نہیں دیے گئے، شہبازشریف کےکراچی کےحلقےمیں دوبارہ گنتی کی اجازت نہیں دی گئی۔

انھوں نے کہا کہ متعدد حلقوں میں فارم 45 نہیں ملے، الیکشن کمیشن کا کام صرف شفاف الیکشن کرانا ہوتا ہے، جس میں ناکامی ہوئی۔

انھوں چیف الیکشن کمشنر سے ملاقات نہ ہونے پر کہا کہ ہم الیکشن کمیشن کے سامنے اپنے تحفظات رکھناچاہتے تھے، مگر ملاقات نہیں ہوسکی۔

ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کے رویےسے افسوس ہے، میں اب بھی اسپیکرقومی اسمبلی ہوں، شاہد خاقان سابق وزیر اعظم ہیں۔

انھوں نے کا کہ سیکرٹری الیکشن کمیشن کام کرانےآتےتھےتومنتیں کرتےتھے۔

صحافی کا سوال

اس موقع پر ایک صحافی نے سوال کیا کہ چیف الیکشن کمشنرکوبھی آپ نےہی لگایا تھا؟

اس پر ایاز صادق نے جواب دیا کہ ہمیں نہیں پتا تھا کہ چیف الیکشن کمشنرایسےالیکشن کرائیں گے، اوقات سےزیادہ اختیارات دےدیے, چیف الیکشن کمشنراپنانام بچائیں اور استعفیٰ دیں۔


تخت پنجاب: ن لیگ مشکل میں، تحریک انصاف کی پوزیشن مضبوط

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں