مسلم لیگ ن سےایک بڑا گروپ علیحدہ ہوگا، شیخ رشید sheikh-rasheed
The news is by your side.

Advertisement

مسلم لیگ (ن) میں دھڑے بندی ہونے جا رہی ہے،بڑا گروپ علیحدہ ہوگا، شیخ رشید

راولپنڈی : سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کا ایک بڑا گروپ اہم سیاسی فیصلہ کرنے جا رہا ہے جو آٹھ ہفتوں میں سب کے سامنےآ جائے گا۔

جناح ہسپتال کے برن سینٹر میں سانحہ احمد پور شرقیہ کے زخمیوں کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ اگر نوازشریف استعفیٰ دے دیتے تو مریم نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہونا پڑتا۔

انہوں نے حکومت پنجاب کی کارکردگی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ پورے پنجاب میں صرف چھ برن یونٹس ہیں جب کہ جنوبی پنجاب میں صحت کی کوئی سہولت نہیں ہے افسوس ہے کہ پنجاب کے اسپتالوں کی حالت جیلوں سے بھی بدتر ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ وہ جے آئی ٹی رپورٹ کے بعد وزیراعظم نواز شریف کی سپریم کورٹ میں طلبی کی استدعا کریں گے کیوں کہ یہ کیس اپنے انجام کو پہنچ چکا ہے جس کے بعد چوہدری نثار اور اسحاق ڈار بھی حالات کے پیش نظر سیاسی قبلہ بدل سکتے ہیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ انہوں نے عمران خان کا ہاتھ تھاما ہے اور اب یہ ہاتھ کٹ تو سکتا ہے لیکن جدا نہیں ہو سکتا اس لیے کوئی بھی اس خوش فہمی نہ رہے کہ شیخ رشید عمران کا ساتھ چھوڑ دے گا۔

تحریک انصاف میں ضم ہونے کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ابھی سیاسی موسم ابر آلود ہے تاہم پاناما کے فیصلے کے بعد اپنی پارٹی کو تحریک انصاف میں ضم کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کروں گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں