The news is by your side.

Advertisement

لیگی کارکنان کا پولیس پر حملہ

لاہور: مسلم لیگ ن کی نائب صدر اور نوازشریف کے رشتے دار یوسف عباس کی احتساب عدالت پیشی کے موقع پر لیگی کارکنان نے قانون کی دھیجیاں بکھیر دیں۔

تفصیلات کے مطابق نیب کی جانب سے مریم نواز اور اُن کے کزن کو لاہور کی احتساب عدالت میں پیشی سے قبل مسلم لیگ ن کے کارکنان نے رکاوٹیں عبور کرنے کی کوشش کی اور روکنے پر پولیس پر حملہ کردیا۔

پولیس نے مظاہرین کو پرامن منتشر رہنے کی اپیل بھی کی جس کے بعد مجبوراً لاٹھی چارج کرنا پڑا، لیگی کارکنان نے جواب میں پولیس پر حملے کیے اور امن و امان کی صورتحال کو ہاتھ میں لینے کی کوشش کی۔

مزید پڑھیں: چوہدری شوگرملز کیس، مریم نواز 21 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

یاد رہے کہ نیب نے مریم نواز اور یوسف عباس کو چوہدری شوگر ملز کیس میں گرفتار کر کے آج عدالت میں پیش کیا، قومی احتساب بیورو نے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جسے عدالت نے منظور کرلیا۔

عدالت میں نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ مریم نوازکےاکاؤنٹ سےمشکوک ٹرانزیکشنزہوئیں، مریم نواز کو 2 مرتبہ نیب آفس طلب کیاگیا، جس پر عدالت کا کہنا تھا آپ کے پاس کیا مواد ہے، جو مریم نواز کو طلب کیاگیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے یہ بھی بتایا 2008 میں مریم نوازکےنام پر11 ملین کےشیئرتھے، اکاؤنٹ میں کروڑوں کی رقم کہاں سےآئی تعین کررہےہیں، چوہدری شوگر ملز سے متعلق  نواز شریف سےتحقیقات کاآغازکیاگیا۔

پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ مریم نوازچوہدری شوگرملزکی ڈائریکٹرہیں، وہ 1992 سے 1997 تک ڈائریکٹر رہیں، مریم نوازکے84لاکھ روپےکےشیئرتھے، جن کی مالیت بڑھ کر 41 کروڑ روپے تک پہنچ گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں