The news is by your side.

Advertisement

‘وزیراعظم کےاعلان سے21ارب روپےکا امپیکٹ آئے گا’

وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ وزیراعظم کےاعلان سے21ارب روپےکاامپیکٹ آئےگا اس اقدام سے صنعتوں کاپہیہ چلےگا اور روزگار کےمواقع ملیں گے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے عمر ایوب نے کہا کہ صنعتوں کوآدھی قیمت میں بجلی فراہم کی جائے گی، سہولت سےسب سےزیادہ فائدہ چھوٹےصنعتکاروں کوہوگا، چھوٹی صنعتوں میں روزگار کے زیادہ موقع میسر آتےہیں، 99فیصدانڈسٹری بی ون سےبی تھرڈمیں آتی ہےپہلےبجلی کی ڈیمانڈ کوپوراکرنے کیلئےآن پیک ریٹ رکھاگیاتھا اب صنعتوں کو کم قیمت پر بجلی فراہم کی جائے گی۔

وزیراعظم عمران خان کا صنعتی شعبے کیلئے پیکج کا اعلان

انہوں نے کہا کہ سابق حکومتوں کے معاہدوں کی وجہ سےپاور سیکٹر میں بےجا ادائیگی ہوتی ہے، سابق حکومتوں کے مہنگے معاہدوں کی وجہ سے بجلی مہنگی ہے آئی پی پیز سے غیر ضروری ادائیگی کے معاہدوں پر نظرثانی کر رہے ہیں لیکن ہم آئی ایم ایف کی ڈیل سےنہیں نکل رہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ایل این جی پائپ لائن نہیں ڈالی گئی اوراسٹوریج پربھی توجہ نہیں دی گئی گزشتہ حکومت کے مہنگے معاہدوں کوآج ہم بھگت رہےہیں تمام انکوائریوں کی رپورٹ سامنےآئیں گی کچھ نہیں چھپایاجائے گا۔

عمر ایوب کا کہنا تھا کہ قومی مفادپرذاتی یاکسی اورشخص کےمفادکوترجیح نہیں دی جائےگی، ایل پی جی پالیسی میں عام صارفین اولین ترجیح ہوں گے، ایل پی جی پالیسی کیلئےڈومیسٹک پروڈیوسرزسےبھی بات چیت کی گئی ہے، ایل پی جی پالیسی میں امپورٹرز کو فائدہ پہنچانے کی باتوں میں صداقت نہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں