مقامی سطح پر تیار ہونے والا پی این ایس ہمت میزائل پاک بحریہ کے بیڑے میں شامل PNS
The news is by your side.

Advertisement

مقامی سطح پر تیار ہونے والا ‘پی این ایس ہمت’ میزائل پاک بحریہ کے بیڑے میں شامل

کراچی: ملکی وسائل سے تیار کردہ فاسٹ اٹیک ( میزائل) کرافٹ پی این ایس ’ہمت ‘ کو پاک بحریہ کے بیڑے میں شامل کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاک بحریہ کے لیے کراچی شپ یارڈ اینڈ انجینئرنگ ورکس کی جانب سے تیار کردہ فاسٹ اٹیک (میزائل) کرافٹ پی این ایس ہمت کی کمیشننگ اور پاک بحریہ میں باقاعدہ شمولیت کی تقریب آج پاکستان نیوی ڈاکیارڈ میں منعقد ہوئی جس میں چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد ذکا ءاللہ نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف آف دی نیول اسٹاف نے کہا کہ یہ ایک نہایت اہم موقع ہے جب ملکی وسائل سے تیار کردہ دوسرا فاسٹ اٹیک میزائل کرافٹ پاکستان نیوی فلیٹ میں شامل کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی شپ یارڈ میں پی این ایس’ ہمت ‘ کی کامیاب تکمیل پاک بحریہ، کراچی شپ یارڈ اور چائنا اسٹیٹ شپ بلڈنگ اینڈ آف شور کمپنی کے لیے باعث فخر ہے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ اندرون ملک تعمیر کیے جانے والے بحری جہازوں پر پاک بحریہ کی جانب سے اعتماد کے اظہار کے باعث پاکستان کی دفاعی برآمدات کو بھی فروغ حاصل ہوگا۔

 نیول چیف نے مزید کہا کہ بحری شعبے میں موجود مواقعوں سے بھر پور فائدہ اٹھانے اور اس سے جڑے چیلنجز سے بخوبی نمٹنے کے لیے ایک موثر، مضبوط اور خود کفیل بحریہ وقت کی اہم ضرورت ہے لہذا تیز رفتار اور جدید ترین میزائل کرافٹس کا حصول سمندر میں بروقت اور فوری رد عمل کی صلاحیت میں اضافے کے لیے ضروری ہے جو ہماری اولین ترجیحات میں بھی شامل ہے۔

  پاک چین اقتصادی راہداری کے تناظر میں محفوظ بحری ماحول کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے نیول چیف نے کہا کہ سی پیک وطن عزیز کے لیے ترقی اور خوشحالی کا پیغام ہے تاہم اس کے ساتھ ساتھ کچھ نئے خطرات بھی جنم لے رہے ہیں لہذا ضرورت اس امر کی ہے کہ اس عظیم منصوبے کو کامیابی سے ہمکنا ر کرنے کے لیے ہم درپیش خطرات سے آگاہ اور ان سے نمٹنے کے لیے تیار رہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی دفاعی حکمت عملی پر امن بقائے باہمی پر مبنی ہے تاہم موجود ہ جغرافیائی اور دفاعی صورتحال میں ہم ملکی دفاع پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کرسکتے۔

 قبل ازیں کراچی شپ یارڈ کے مینیجنگ ڈائریکٹر رئیر ایڈمرل سید حسن ناصر شاہ نے کہا کہ یہ اسٹیٹ آف دی آرٹ بحری جہازجو چائنا شپ بلڈنگ اینڈ آف شور کمپنی (CSOC) اور ژیانگ شپ یارڈ کے تعاون سے تیار کیا گیا ہے، جو دفاعی پیداوار کے میدان میں پاک چین اشتراک کی تاریخ کا ایک اور اہم سنگ میل ہے۔

منصوبے کے نمایاں پہلوؤں پر روشنی ڈالتے ہوئے مینیجنگ ڈائریکٹر کراچی شپ یارڈ نے کہا کہ ماضی قریب میں کراچی شپ یارڈ اینڈ انجینئرنگ ورکس نے پاک بحریہ کے لیے متعدد منصوبے کامیابی سے مکمل کیے جس کے نتیجے میں کراچی شپ یارڈ کے ساتھ دیگر کئی منصوبوں کی تعمیر کے معاہدے کیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان منصوبوں میں 17000ٹن فلیٹ ٹینکر، میری ٹائم پٹرول ویسلز (MPVs)، مقامی طور پر ڈیزائن کردہ فاسٹ اٹیک (میزائل ) کرافٹ، 32ٹن بلرڈ پل ٹگ اور کثیر المقاصد بارج شامل ہیں جو اس وقت تعمیر کے مختلف مراحل میں ہیں۔

مینیجنگ ڈائریکٹر نے مزید بتایا کہ گزشتہ مالی سال کے اختتام سے قبل تین نئے منصوبوں کے سمجھوتوں پر بھی دستخط کیے جائیں گے جن میں 3000ٹن سروے شپ، پاک بحریہ کے لیے 1900ٹن OPVsاور پاکستان کسٹمز کے لیے دو FRPبوٹس شامل ہیں۔

ملکی وسائل سے تیار کردہ میزائل پی این ایس ہمت 63 میٹر لمبائی کی مسافت سے فاسٹ اٹیک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے، اس تیزرفتار میزائل میں اسٹیٹ آف دی آرٹ ہتھیاروں اور سینسرز شامل کیے گئے ہیں۔ منصوبے کی ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ اس میں مقامی طورپر تیار کردہ میزائل سسٹم نصب کیا گیا ہے۔ دشمن کے لیے خطرناک ہونے کے اعتبار سے اس کرافٹ کا کسی بھی جدید بحری ہتھیار سے مقابلہ کیا جاسکتا ہے ۔

اس تقریب میں اعلیٰ حکومتی عہدے داروں، چینی سفارتخانے کے نمائندوں، پاک بحریہ کے اعلیٰ حکام، چائنا شپ بلڈنگ اینڈ   کے نمائندگان اورمختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی اعلیٰ شخصیات نے شرکت کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں