ننھے عمر کے بازو ضائع ہونے کا معاملہ،کے الیکٹرک کے 7ملازمین گرفتار
The news is by your side.

Advertisement

ننھے عمر کے بازو ضائع ہونے کا معاملہ،کے الیکٹرک کے 7ملازمین گرفتار

کراچی : کےالیکٹرک کی غفلت سےبچےکی معذوری کے واقعے پر گڈاپ ٹاؤن پولیس نے کے الیکٹرک کے دفتر پر چھاپہ مار کر سات ملازمین کو حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق کے الیکٹرک کی غفلت سے معصوم عمر کے بازو ضائع ہونے کے واقعے پر پولیس ایکشن میں آگئی، گڈاپ ٹاؤن پولیس نے کےالیکٹرک کے دفترپر چھاپہ مار کر سات ملازمین کو گرفتار کرلیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ساتوں افرادکےالیکٹرک احسن آبادکاٹیکنیکل اسٹاف ہے، ملازمین سے عمر کے معاملے پر تفتیش کی جارہی ہے۔

پولیس کے مطابق کے الیکٹرک کے افسران کل سے دفتر سے فرار ہیں اور چھاپہ پڑتے ہی دیگر بالا افسران بھی فرار ہوگئے جبکہ کےالیکٹرک کےڈی جی ایم سمیت افسران کیلئےچھاپے جاری ہیں۔

اس سے قبل مجرمانہ غفلت سے بچے کی ہاتھوں سے محرومی پر کے الیکٹرک مینجمنٹ کیخلاف سائٹ سپر ہائی وے تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا تھا، مقدمہ متاثرہ بچے کے والد محمد عارف نے درج کرایا۔

مزید پڑھیں : ننھا عمر دونوں بازؤں سےمحروم، غفلت پر کے الیکٹرک کیخلاف مقدمہ درج

مقدمہ نمبر 323 ، 18 دفعہ 337 ایچ 1 کے تحت مجرمانہ غفلت سے نقصان پہنچانے کے زمرے میں درج کیا گیا، مقدمہ میں کے الیکٹر کے گڈاپ ٹاؤن کی منیجمنٹ کو نامز د کیا گیا ہے۔

ایف آئی آرکے مطابق بچہ چیز لینے دکان پر گیا، دکان سے ملحقہ پول سے گیارہ ہزار وولٹ کی تاریں بیٹے پر گریں، بچے کو فوری اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ڈاکٹرز نے بازو کاٹنے کا مشورہ دیا ۔ کے الیکٹرک کے مجرمانہ غفلت سے بچے کے ہاتھ ضائع ہوگئے، غفلت کے مرتکب افراد کو گرفتار کرکے سزا دی جائے۔

یاد رہے گٓذشتہ روز کراچی کے علاقے احسن آباد میں کے الیکٹرک کی لاپرواہی کے باعث 8 سالہ بچے عمر پر بجلی کے تار گرگئے تھے ، جس کے باعث بچے کے دونوں بازو ضائع ہوگئے تھے۔

متاثرہ بچے کے والدین کی جانب سے کے الیکٹرک کی لاپرواہی پر ادارے کے خلاف بھرپور قانونی چارہ جوئی کرنے کا اعلان کیا تھا۔

بعد ازاں گورنر سندھ عمران اسماعیل نے 8 سالہ بچے عمر کے بازو ضائع ہونے پر کے الیکٹرک کے حکام سے تار گرنے کی وضاحت طلب کرتے ہوئے متاثرہ بچے کو علاج معالجے کی تمام سہولتیں فرام کرنے کی ہدایات جاری کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں