The news is by your side.

Advertisement

اجتماعی زیادتی: ماں بیٹی کے گڑگڑانے پر بھی درندوں کو رحم نہ آیا، خواتین نے سب بتا دیا

لاہور: پنجاب کے دارالحکومت میں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی ماں بیٹی سے پولیس نے بیان قلم بند کرلیا۔

متاثرہ خاتون ارشاد بی بی نے پولیس کو بتایا کہ لاہور میں ٹھوکر نیازبیگ سے صدر تک رکشے کا کرایہ 300 روپے طے ہوا، میں لاہور میں دوسری بار آئی راستے کا پتہ نہیں تھا، ڈرائیور اور اس کا ساتھی رکشہ ایک اسکیم میں لے گئے۔

اپنے بیان میں خاتون نے کہا ملزمان نے ویرانے میں گن پوائنٹ پر رکشے سے اتارا اور زیادتی کی، ہاتھ جوڑ کرکہا میری بیٹی کو زیادتی کا نشانہ مت بنائیں۔

دریں اثنا بیٹی کا کہنا تھا کہ میں نے ملزمان سے کہا ماں دل کی مریضہ ہے زیادتی نہ کریں، ملزم عمر نے ہم دونوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا جبکہ ملزم منصب نے صرف والدہ کے ساتھ زیادتی کی۔

چوہنگ میں ماں بیٹی سے زیادتی کی میڈیکل رپورٹ میں تصدیق

ماں بیٹی نے بتایا کہ کار سوار عباس کے آنے پر ملزم ہمیں چھوڑ کر فرار ہو گئے، عباس نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع دی اور ہمیں اسپتال لے گئے۔

خیال رہے کہ 22 اگست کو لاہور کے علاقے چوہنگ میں رکشہ ڈرائیور نے اپنے ساتھی کے ہمراہ مذکورہ خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ بعد ازاں حکام نے ایکشن لیا اور ملزمان کی گرفتاری عمل میں آئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں