The news is by your side.

Advertisement

کراچی پولیس فائرنگ سے ایک اور شہری جاں بحق، زخمی شہری کا ابتدائی بیان ریکارڈ

کراچی: شہر قائد میں پولیس کے ہاتھوں شہریوں کے قتل کا سلسلہ جاری ہے، کینٹ اسٹیشن میں ایک گاڑی پر پولیس اہل کاروں کی فائرنگ سے شہری جاں بحق ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے کینٹ اسٹیشن کے قریب پولیس کی ایک گاڑی پر فائرنگ سے شہری نبیل ہود بائے جاں بحق جب کہ ایک شہری رضا امام زخمی ہو گیا ہے۔

ایس ایس پی جنوبی کا کہنا ہے کہ گذری پولیس کے اہل کار گاڑی کا پیچھا کرتے کینٹ اسٹیشن کے قریب پہنچے اور گاڑی پارک ہونے کے بعد فائرنگ کر دی۔ فائرنگ میں ملوث تین اہل کاروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

تفتیشی ٹیم جائے وقوع پر فائرنگ کے واقعے کے سلسلے میں تحقیقات کر رہی ہے، فائرنگ کی جگہ پر سی سی ٹی وی کیمروں کی فوٹیج بھی حاصل کی جا رہی ہے، جب کہ اطراف میں موجود چوکیداروں کے بیانات بھی قلم بند کیے جا رہے ہیں، دوسری طرف فائرنگ کے واقعے میں متاثرہ گاڑی تھانے منتقل کر دی گئی ہے۔

ڈی آئی جی ساؤتھ شرجیل کھرل نے کہا ہے کہ واقعے کی تفتیش کے لیے تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے، ایس ایس پی انویسٹی گیشن ساؤتھ رائے اعجاز ٹیم کی سربراہی کریں گے، ایس ایس پی ساؤتھ اور ڈی ایس پی فریئر تفتیشی ٹیم میں شامل ہوں گے، سی سی ٹی وی کیمروں سے ریکارڈ حاصل کیا جا رہا ہے، ملوث سب انسپکٹر اور 2 ہیڈ کانسٹیبلز حراست میں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  پولیس کی فائرنگ سے کم سن بچے کی ہلاکت کا معاملہ، آئی جی سندھ نے معافی مانگ لی

پولیس فائرنگ سے زخمی ہونے والے شہری رضا امام نے پولیس کو ابتدائی بیان ریکارڈ کرا دیا، پولیس کے مطابق جاں بحق شہری رضا امام کا دوست تھا، دونوں نے گزری کھڈا مارکیٹ کے قریب کھانا کھایا، جب یہاں سے روانہ ہوئے تو پولیس نے پیچھا کیا، معلوم نہیں تھا کے پولیس پیچھے ہے۔

زخمی شہری کے بیان کے مطابق ابھی پتا چلا کہ پولیس راستے میں بھی فائرنگ کر رہی تھی، کینٹ اسٹیشن کے قریب گاڑی روکی تو فائرنگ کر دی گئی، میں اور میرا دوست امپورٹ ایکسپورٹ کا کام کرتے ہیں، پولیس کیوں پیچھے لگی ہمیں نہیں معلوم۔

پولیس کا کہنا ہے کہ زخمی شخص رضا امام کا بیان لے کر مزید تفتیش کی جاری ہے، زخمی کو دائیں بازو پر گولی لگی، حالت خطرے سے باہر ہے، جائے وقوعہ سے نائن ایم ایم پستول کا ایک خول ملا ہے، ممکنہ طور پر جاں بحق اور زخمی شخص کو ایک ہی گولی لگی، متاثرہ شہریوں کے اہل خانہ سے رابطہ کیا گیا ہے، ان کی مدعیت میں واقعے کا مقدمہ درج کیا جائے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں