The news is by your side.

Advertisement

پولیو کے خاتمے کیلئے کوشاں لاہور کی دو خواتین عزم و ہمت کا پیکر

لاہور : انسداد پولیو مہم کی کامیابی کے لئے خواتین پولیو ورکرز عزم و ہمت کی مثال بن گئیں، بیوہ طاہرہ اور تنگدست زندگی گزارنے والی نادیہ بچوں کو ویکسین پلا کراپنا گزر بسر کرتی ہیں۔

لاہور کی دونوں خواتین پاکستان سے اس موذی مرض کے مکمل خاتمے کے لئے جدوجہد کر رہی ہیں، طاہرہ اور نادیہ نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ پولیو کے انسداد کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گی۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جب میں نے ایک اپاہج بچے کو دیکھا تو اسی وقت فیصلہ کیا کہ بچوں کو اس موذی مرض سے بچانے کیلئے میں پوری کوشش کروں گی اس طرح میں انسانیت کی خدمت بھی کرسکتی ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ کام کے دوران بہت سے مسائل بھی درپیش ہوتے ہیں، کچھ والدین ایسے ہوتے ہیں جو ہمارے ساتھ تعاون نہیں کرتے پھر انہیں سمجھانا بھی پڑتا ہے لیکن ہمارا عزم ہے کہ اس بیماری کا جڑ سے خاتمہ ممکن بنانا ہے اور پاکستان کو پولیو فری بنانا ہے۔

اس حوالے سے ڈی ڈی ایچ او نشتر ٹاؤن ڈاکٹر احمد غوث کا کہنا ہے کہ دونوں لیڈی ہیلتھ ورکرز مجبوری کی زندگی گزارنے کے باوجود انسانیت کی خدمت کے جذبے سے سرشار ہیں۔

طاہرہ اور نادیہ کا بچوں کو پولیو ویکسین پلا کر عمر بھر کی معذوری سے بچانے کا عزم قابل ستائش اور دوسرے پولیو ورکرز کے لئے تقلید کے قابل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں