site
stats
ضرور پڑھیں

پاکستان میں آلودہ پانی دہشت گردی سے بڑا عفریت

دہشت گردی پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے جس میں اب تک ہزاروں پاکستانی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، تاہم حال ہی میں اقوام متحدہ نے اس شے کی طرف توجہ دلائی ہے جو دہشت گردی میں مارے جانے والوں سے زیادہ پاکستانیوں کی موت کی ذمہ دار ہے۔

اقوام متحدہ کی جانب سے حال ہی میں جاری کردہ ایک رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں ہونے والی سالانہ اموات میں سے 40 فیصد اموات گندے اور آلودہ پانی اور اس کی وجہ سے پیدا ہونے والی بیماریوں کی وجہ سے ہوتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ہر سال ایک لاکھ کے قریب افراد آلودہ پانی اور اس سے ہونے والی بیماریوں کے ہاتھوں موت کے گھاٹ اتر جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں: دنیا میں 2 ارب افراد فضلے سے آلودہ پانی پینے پر مجبور

ان میں زیادہ تعداد بچوں کی ہوتی ہے جو کمزور قوت مدافعت کے باعث آلودہ پانی میں پائے جانے والے جراثیموں سے ہلاک ہوجاتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ صنعتوں سے زہریلا اخراج اور غیر محفوظ سیوریج سسٹم پانی کو آلودہ بنانے کی سب سے بڑی وجہ ہے۔

دوسری جانب گاؤں دیہاتوں میں فراہمی آب کی صورتحال نہایت تشویش ناک ہے۔ کئی گاؤں دیہاتوں میں لوگوں کو پانی لانے کے لیے کئی کلو میٹر کا سفر طے کرنا پڑتا ہے، جبکہ وہاں جانوروں اور انسانوں کا ایک ہی مقام سے پانی پینا بھی معمول کی بات ہے۔

 عالمی ادارہ صحت کے مطابق پاکستان کی صرف 15 فیصد آبادی کو پینے کا صاف پانی میسر ہے جبکہ 85 فیصد شہری گندا اور آلودہ پانی پینے پر مجبور ہیں۔

مزید پڑھیں: آلودہ پانی صاف کرنے کا ایک اور طریقہ

ایک پاکستانی ماہر طب کے مطابق پاکستان کے صحت بجٹ کا تقریباً نصف فیصد حصہ آلودہ پانی سے پیدا ہونے والی بیماریوں کے علاج پر خرچ ہورہا ہے۔

ان کے مطابق اگر صاف پانی کی فراہمی کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کیے جائیں تو نہ صرف بجٹ کا یہ حصہ محفوظ کیا جاسکتا ہے بلکہ ہزاروں افراد اور بچوں کو بھی مرنے سے بچایا جاسکتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top