The news is by your side.

Advertisement

آگرہ کی آلودگی نے تاج محل کا حسن گہنا دیا، عدالتی حکم کے باوجود حکومت غافل

غیرملکی ماہرین کی خدمات حاصل کرنے کے عدالتی حکم پر تاحال عمل درآمد نہیں ہوسکا

آگرہ: سترہویں صدی میں تعمیر کردہ تاج محل اپنا اصل رنگ روپ کھو رہا ہے، جس کی وجہ سے اس عالمی ورثے پر خطرات کے بدل منڈلا رہے ہیں.

تفصیلات کے مطابق دنیا کے سات عجائبات میں شمار ہونے والے تاج محل کا بیش قیمت سفید سنگ مرمر زرد اور سبز رنگ میں‌ تبدیل ہوجاتا ہے، اس ضمن میں‌ بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے غیرملکی ماہرین کی خدمات کرنے کے حکم پر تاحال عمل درآمد نہیں‌ ہوسکا.

واضح رہے کہ آگرہ کا شمار دنیا کے دس آلودہ ترین شہروں میں ہوتا ہے، یہ آلودگی محبت کی اس عظیم یادگار کو براہ راست متاثر کر رہی ہے.

تاج محل اپنے پہلو میں بہتے آلودہ دریا، گاڑیوں اور کارخانوں کے دھویں اور اسموگ کی زد میں ہے، بھارتی عدلیہ نے حکومت کو مغل بادشاہ شاہ جہاں کے تعمیرکردہ اس شاہ کار کی دیکھ بھال میں ناکامی پر تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور ٹھوس اقدامات کی ہدایت کی تھی، جس پر تاحال عمل نہیں ہوسکا۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ آگرہ میں ہونے والی بارشوں اور طوفانی ہواؤں سے محبت کی عظیم الشان علامت تاج محل کے چار صدیوں سے کھڑے مینار منہدم ہوگئے۔


محبت کی عظیم الشان علامت تاج محل کے صدیوں پرانے مینار ٹوٹ گئے


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں