The news is by your side.

Advertisement

یمن میں قیام امن کے لیے سعودی عرب اور امریکا کی مشترکہ کوششیں

واشنگٹن: یمن میں قیام امن کے لیے سعودی عرب اور امریکا نے مشترکہ کوششوں کو جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے نائب وزیردفاع شہزادہ خالد بن سلمان کی واشنگٹن میں امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات ہوئی اس دوران دونوں ممالک نے یمن سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے امریکی وزیرخارجہ نے سعودی عرب کی یمن میں قیام امن کے لیے کوششوں کو سراہا، اور ساتھ دینے کا شکریہ بھی ادا کیا۔

دونوں رہنماؤں نے یمن میں دہشت گردی کو فروغ دینے والے ملک کے خلاف کارروائی کرنے سمیت خطے سے عسکریت پسندی کے خاتمے پر زور دیا۔

مائیک پامپیو نے شہزادہ خالد بن سلمان کو نیا منصب سنبھالنے پر مبارک باد بھی پیش کی اور دوطرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب اور امریکا دوستی کی بہترین مثال قائم کرچکے ہیں۔

خیال رہے کہ رواں سال جنوری میں خالد بن سلمان نے کہا تھا کہ حوثی جنگجوؤ مسلسل جنگی بندی معاہدے کی خلاف ورزی کررہے ہیں، عالمی برادری یمن میں قیام امن کےلیے اپنا کردار ادا کرے۔

یمن جنگ: اقوام متحدہ امن معاہدے پر عمل درآمد کو یقینی بنائے، خالد بن سلمان

یاد رہے کہ گزشتہ برس دسمبر میں یورپی ملک سویڈن میں اقوام متحدہ کے تحت ہونے والے امن مذاکرات میں دونوں فریقن کے درمیان حدیدہ شہر میں جنگ بندی سمیت کئی نکات پر اتفاق ہوا تھا جس کے بعد یمن میں گذشتہ کئی برسوں سے جاری جنگ کے ختم ہونے کی امید پیدا ہوئی تھی۔

یمنی حکومت اور حوثیوں کے درمیان سنہ 2016 کے بعد سے یہ پہلے امن مذاکرات ہیں جس کے بعد تین نکات پر اتفاق رائے کیا گیا ہے اگر کسی بھی فریق کی جانب سے کوتاہی یا لاپرواہی کا مظاہرہ کیا گیا تو امن مذاکرات تعطلی کا شکار ہوسکتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں