site
stats
فوڈ

پاکستان کے مختلف علاقوں کے مشہور کھانے

کراچی : دنیا بھر میں پاکستان کے کھانے مشہور ہیں، یہاں کے کھانے چٹپٹے اور لذیذ ہوتے ہیں لیکن کچھ ایسی کھانے ہیں جو پاکستان کے شہروں کی پہچان ہے۔

آج ہم آپ کو ان کھانوں کے بارے میں بتاتے ہیں، جنہیں سوچ کر ہی آپ کے منہ میں پانی آجائے گا اور جو پاکستان کے مختلف شہروں میں اپنے منفرد ذائقے کے اعتبار سے کافی شہرت رکھتے ہیں۔


لاہور کے مشہور کھانے


لاہور اپنے خاص پکوانوں کی وجہ سے کافی مشہور ہے لاہور کے لوگ کھانا پسند کرتے ہیں اور ڈٹ کر کھاتے بھی ہیں اور دوسروں کو بھی کھلاتے ہیں۔

لاہوری چرغہ

chargha

لاہور کا چرغا پورے پاکستان میں مشہور ہے، لاہور کے چرغے میں منفرد اور مختلف مصالحہ جات استعمال کئے جاتے ہیں، جس سے چرغے کا ذائقہ اتنا لذیز ہوجاتا ہے کہ کھانے والے اپنی انگلیاں چاٹنے پر مجبور ہوجاتے ہیں۔

لاہور کے سری پائے

LAHROI PAYE

سری پائے اور خاص طور پر لاہور کے پھجے کے سری پائے کا ذکر تو آپ نے سنا ہوگا، جس کا ذکر ہر خاص و عام کی زبان پر ہوتا ہے، لاہوری ناشتہ میں حلوہ پوری ، نہاری ، اور سری کھانا پسند کرتے ہیں، لاہور کے سری پائے وزیراعظم پاکستان نواز شریف کی پسندیدہ ڈشوں میں سے ایک ہے۔

ملتان کا سوہن حلوہ

halwa

ملتان کا سوہن حلوہ ایسی سوغات ہے جو نہ صرف ملتان میں رہنے والے بلکہ دیگر شہروں سے آنے والے لوگ بے حد پسند کرتے ہیں۔
ملتان کا سوہن حلوہ اپنے ذائقے کے باعث دنیا بھر میں بے حد مقبول ہے، ملتان کے سوہن حلوے کی خوشبو اتنی سوندھی ہوتی ہے کہ کھائے بغیر نہیں رہا جاسکتا۔

جب کوئی شخص ملتان آئے اور سوہن حلوہ نہ کھائے ایسا تو ممکن نہیں جبکہ آنے والے سوہن حلوہ اپنے دوستوں اور رشتے داروں کیلئے بطور تحفہ بھی لے جاتے ہیں۔

خان پور کے پیڑے

khanpur

خان پور کے پیڑے اپنے منفرد ذائقے اور لذت کی وجہ سے پورے پاکستان میں کافی مشہور ہے، لوگ ان پیڑوں کو بہت شوق سے کھاتے اور دوستوں کیلئے لے جاتے ہیں۔


اندورنِ سندھ کے مشہور کھانے


سندھی بریانی

sindhi-biryani

سندھی بریانی پاکستان بھر میں مشہور ہے، اسکو سندھ کی ایک روایت ڈش تصور کیا جاتا ہے، یہ گوشت اور چاول کے ساتھ مل کر بنتی ہے، اس کا ذائقہ دوسری بریانی سے الگ ہوتا ہے۔

حیدرآبادی مرچوں کا سالن

hyderabadi-salan

حیدرآبادی کھانے اپنے منفرد مصالحوں کی وجہ سے بہت مشہور ہیں، یہ صوبہ سندھ کے مشہور ڈش میں سے ایک ہے، ایک اور مقبول ڈش ہے۔

شکار پور کا اچار

achar

اگر آپ نے شکارپور کے اچار اور مربے نہیں کھائے تو دسترخوان کا ذائقہ ادھورا سمجھیے، شکار پور کا اچار اپنے کھٹاس اور ذائقے کے لحاظ سے پورے پاکستان میں مشہور ہے اور لوگ اسے کافی شوق سے کھاتے ہیں جبکہ اس کو فرمائش کرکے منگوایا بھی جاتا ہے۔

حیدر آباد کی ربڑی

hyd-rabri

ربڑی اور وہ بھی حیدرآباد کی ربڑی ہو تو مزہ ہی دوبالا ہوجاتا ہے، اس کا ذائقہ اتنا لزیذ ہوتا ہے کہ کھاتے ہی جائے لیکن دل نہیں بھرتا۔


کراچی کے مشہور کھانے


 

karachi

کراچی میں ملنے والے کھانے اور پکوان لذت اور معیار کے اعتبار سے اپنی مثال آپ ہوتے ہیں، کراچی میں بن کباب ، مزیدار مٹکے والے دہی بڑے، چنا چاٹ ، دہراجی کا گولہ گنڈا ، بریانی ، نہاری ، لیاقت آباد کے گول کپے ، فریسکو کے دہی بڑے اور سموسے، پراٹھا اور چائے بہت مشہور ہے۔


پشاور کے مشہور کھانے


پشاور کے چپلی کباب

chapli

پشاور کے چپلی کباب پاکستان بھر کے علاوہ دنیا بھر میں اپنی لذت اور ذائقہ کے لئے مشہور ہیں، چپل کبابوں کے بننے کی خوشبو نہ صرف مقامی افراد بلکہ باہر سے آنے والوں کو بھی اپنی طرف کھینچتی ہے، چپل کباب خاص طور پر گائے کے گوشت سے بنائے جاتے ہیں مگر چپل کباب بکرے،بھیڑ اور مرغی کے گوشت سے بھی بن سکتے ہیں۔ چپلی کباب پشتو کے لفظ چپرخ سے نکلا ہے، جس کا معنی ہے گول ، فلیٹ۔ یا چپٹا


بلوچستان کے مشہور کھانے


بلوچی سجی

sajji
سجی نہ صرف ایک بہترین روایتی ڈش ہے بلکہ یہ بلوچستان کی پہچان بھی بن چکی ہے، جو بھی اسے کھاتا ہے اسے بار بار کھانے کی خواہش ہوتی ہے، سجی کی تیاری میں بکرے کی ران اور دستی کو دہکتے کوئلوں کی آگ سے اسے اپنے منفرد انداز میں تیار کیا جاتا ہے۔

سجی واحد ڈش ہے جو بغیر گھی کے پکائی جاتی ہے ، تمام روایتی ڈشوں میں سجی کو خاص اہمیت حاصل ہے ۔ بلوچستان اپنے لذیذ اور خوش ذائقہ کھانوں اور مہمان نوازی کی وجہ سے ملک بھر میں مشہور ہے ۔

چترالی منتو

manto

چترالی منتو ایک روایتی ڈش ہے ، جو گائے کے گوشت ے دنبے کے گوشت سے بنتی ہے، اس کو بنانے کیلئے گوشت میں پیاز کے ساتھ تمام مصالحے ڈال کر مکس کیا جاتا ہے، پھر ڈو لی جاتی ہے اور چھوٹے چھوٹے پیڑے بنا لئے جاتے ہیں اور ان پیڑوں کے بیچ میں مصالحہ لگا گوشت رکھ کر بند کردیا جاتا ہے۔

ایک اسٹیل کے برتن میں منتو کو بھاپ میں پکایا جاتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top