The news is by your side.

Advertisement

آلو زیادہ مقدار میں کھانے سے بلڈ پریشر میں اضافہ ہوسکتا ہے

بوسٹن: آلو پوری دنیا کی مرغوب ترین غذا ہے لیکن ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ہفتے میں چار سے زائد مرتبہ صرف آلو کھانے سے بلڈ پریشر میں اضافے کا خدشہ پیدا ہوجاتا ہے.

تفصیلات کے مطابق آلو زیادہ مقدار میں کھانے سے بلڈ پریشر میں اضافہ ہوسکتا ہے،پکے اور ابلے ہوئے آلو کھانے سے گیارہ فیصد اور فرائی آلو کھانے سے یہ خدشہ سترہ فیصد تک بڑھ سکتا ہے.

AALLU POST 1

بوسٹن میں کی جانے والی تحقیق کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ آلو کے زیادہ استعمال اور اس کے بلڈ پریشر پر اور دیگر نقصانات پر اب بحث ہونی چاہیے،لیکن ایک ماہر نے کہا ہے کہ سارا الزام آلوؤں پر نہیں دھرنا چاہیے بلکہ اس کے ساتھ گوشت،تیل،اچار،چٹنیاں اور بے تحاشہ نمک بھی اس مرض کی وجہ ہوسکتے ہیں.

AALLU POST 3

ماہرین نے بیس سال تک1 لاکھ 87 ہزار سے زائد خواتین اور مردوں کا جائزہ لیا اور ان سے ان کی خوراک کے بارے میں سوال نامے بھروائے گئے،مطالعے کے شروع اور آخر میں ان سے ان کے بلڈ پریشر کے بارے میں پوچھا گیا.

شروع میں تو کسی نے بلڈ پریشر کی شکایت نہیں کی،لیکن اس کے بعد ان کا سروے کیاگیا تو آلو کھانے والے افراد کی اکثریت کا بلڈ پریشر معمول سے زیادہ ریکارڈ کیا گیا.

ماہرین کے مطابق آلو میں گلائسیمک کی زائد مقدار موجود ہوتی ہے جو بلڈ پریشر میں اضافہ کرتی ہے اور اس تحقیق کی یہی بڑی وجہ ہوسکتی ہے،گلائسیمک انڈیکس سے یہ بھی معلوم ہوتا ہے آخر کاربوہائیڈریٹس خون میں شوگر کی وجہ کیوں بنتے ہیں.

AALLU POST 2

غذائی ماہرین کا کہنا ہےکہ ان کی تحقیق سے یہ ثابت ہوا ہے کہ آلو براہِ راست بلڈ پریشر نہیں بڑھاتے بلکہ بلڈ پریشر بڑھانے میں کسی نہ کسی طرح مددگار ہوتے ہیں،ایک اور غذائی ماہر نے کہا ہے کہ فرنچ فرائز کی صورت میں آلو کھانا زیادہ خطرناک ہونا چاہیے اور سب سے کم نقصان ابلے ہوئے آلوؤں سے ہوتا ہے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں