The news is by your side.

Advertisement

شدید گرمی میں لاکھوں عراقی بجلی سے محروم، احتجاجی مظاہرے شروع

بغداد: عراق میں فنی خرابی کے باعث تمام بجلی گھر معطل ہونے کے سبب لاکھوں عراقی بجلی سے محروم ہو گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق عراق کے بیش تر علاقے جمعے کی صبح بجلی سے محروم ہوگئے، فنی خرابی کے باعث ملک کے تمام بجلی گھر مکمل طور پر معطل ہیں، جب کہ ملک شدید گرمی کی لپیٹ میں ہے۔

مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی نے بجلی کے بریک ڈاؤن اور اس سے پیدا ہونے والے مسائل سے نمٹنے کے لیے وزارتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے، ادھر عراق کے متعدد شہر ایک ہفتے سے بجلی کی شدید قلت کے بحران سے دوچار ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بجلی کے بحران نے بغداد کے پوش علاقوں کو بھی متاثر کیا ہے، اور لاکھوں عراقی بجلی سے محروم ہونے کی وجہ سے بدامنی کے خدشات ہیں، بصرہ شہر میں بجلی کی بندش کے خلاف لوگ گھروں سے باہر نکل آئے اور انھوں نے سڑکوں پر ٹائر جلا کر احتجاج کیا۔

دوسری طرف بجلی کی وزارت نے کہا ہے کہ بغداد میں تخریبی کارروائی کی وجہ سے سپلائی کی ایک لائن کو نقصان پہنچا ہے، تاہم ماہرین کی ٹیموں نے ریکارڈ وقت میں تخریبی کارروائی سے متاثرہ لائن بحال کر دی۔

عراقی حکومت کا کہنا تھا کہ بجلی کی تدریجی بحالی کا نظام الاوقات تیار کر لیا گیا ہے، اور اس کے مطابق بحالی کا کام ہنگامی بنیادوں پر جاری ہے۔

وزارت بجلی نے سیکیورٹی اداروں، قبائل کے شیوخ اور عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ بجلی کی ترسیل کی لائنوں اور ٹاورز کے قریب مشکوک سرگرمیوں پر نظر رکھیں، اور اس حوالے سے حکا کو مطلع کریں، کیوں کہ دہشت گرد عناصر بجلی کے نظام کو نقصان پہنچانے کے لیے ترسیل کی لائنوں اور بجلی گھروں کو مبینہ طور پر نشانہ بنا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ عراقی وزیر برائے بجلی نے پیداوار میں کمی اور ملک میں بجلی کی تقسیم کے مسئلے کے پیش نظر مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے، 2003 سے لے کر اب تک آنے والی حکومتیں بجلی کا بحران حل کرنے میں ناکام رہی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں