The news is by your side.

Advertisement

بجلی کی قیمت بڑھنے سے 80 ارب روپے ملیں گے: وزیر توانائی

اسلام آباد: وزیر توانائی عمر ایوب خان نے کہا ہے کہ نیپرا نے بجلی کے نرخ میں 83 پیسے اضافے کی تجویز دی، 300 یونٹ کے صارفین پر اضافے کا کوئی بوجھ نہیں ڈال رہے، بجلی کی قیمت بڑھنے سے 80 ارب روپے ملیں گے۔

تفصیلات کے مطابق آج اسلام آباد میں وزیر توانائی عمر ایوب خان نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا گردشی قرضہ گزشتہ حکومت کے دور میں ہر ماہ 38 ارب بڑھتا تھا، اب اسے گزشتہ 3 ماہ میں 35 ارب روپے پر لے آئے ہیں، اس سے گردشی قرضہ 10 سے 12 ارب روپے پر آ گیا ہے۔

بجلی نرخوں میں کمی سے متعلق انھوں نے کہا نرخوں میں کمی چوری پر قابو پانے سے ممکن ہو سکے گی، قابل تجدید توانائی کے ذریعے بھی نرخوں میں کمی ہو گی، بجلی نرخوں میں اضافہ ن لیگ حکومت کی غلط پالیسی کی وجہ سے ہے، مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے مہنگے پاور پلانٹس لگائے، ووٹ لینے کے لیے ن لیگ نے ڈیڑھ سال تک نرخ نہیں بڑھائے۔

یہ بھی پڑھیں:  بجلی کی قیمت میں مزید 30 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری

وزیر توانائی کا کہنا تھا 1400 فیڈرز پر چوری کے خاتمے کے لیے ہماری ٹیمیں کام کر رہی ہیں، بجلی کی قیمت بڑھنے سے 80 ارب روپے ملیں گے، سسٹم کی اپ گریڈیشن پر 25 ارب روپے خرچ کیے جائیں گے، قابل تجدید توانائی کو 2023 تک 42 ہزار میگا واٹ تک لے جانا چاہتے ہیں۔

عمر ایوب نے کہا نیپرا آزاد ریگولیٹر ہے، ہمارا کسی ادارے پر کوئی دباؤ نہیں، قانون کے مطابق چلتے ہیں، بجلی چوروں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی ہے، چور چور ہوتا ہے اس کی جنس کی حیثیت کا تعین کرنا ضروری نہیں۔

انھوں نے کہا ہم وہ فیصلہ کریں گے جو ملک اور قوم کے حق میں ہوگا، چیپ پاپولیریٹی نہیں لینا چاہتے، بارودی سرنگیں نہیں بچھا کر جائیں گے، جن لوگوں کی حیثیت ہے ان پر ہی بوجھ ڈالا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں