میر ہزارخان بجارانی قتل، سیاسی حلقوں‌ کا اظہار افسوس، پارٹی کی جانب سے سوگ کا اعلان -
The news is by your side.

Advertisement

میر ہزارخان بجارانی قتل، سیاسی حلقوں‌ کا اظہار افسوس، پارٹی کی جانب سے سوگ کا اعلان

کراچی: سابق صدر اور پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ میرہزارخان بجارانی پارٹی کا سرمایہ تھے، ان کا شمار سینئر کارکنوں میں ہوتا تھا.

تفصیلات کے مطابق آصف زرداری نے مقتول کے اہل خانہ سے رابطہ کرکے تعزیت کی ہے۔ بلاول بھٹو نے بھی پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما اوران کی اہلیہ کے قتل پر افسوس کا اظہار کیا. پارٹی کی جانب سے تمام سرگرمیاں‌ معطل کرکے تین روزہ سوگ کا اعلان کردیا گیا ہے.

یاد رہے کہ آج دوپہر ڈیفنس میں صوبائی وزیرمیرہزارخان بجارانی اور اہلیہ کی لاشیں‌ بیڈروم سے متصل اسٹڈی سے برآمد ہوئی تھیں۔وزیر برائے پلاننگ اینڈ ڈیویلپمنٹ اوران کی اہلیہ کی لاشیں کمرے کا دروازہ توڑ کر نکالی گئیں۔

دیگر سیاسی شخصیات کے ساتھ وزیر اعلی پنجاب شہبازشریف نے بھی اس قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا انھیں‌ میرہزاربجارانی اوران کی اہلیہ کے قتل پرانھیں شدید صدمہ پہنچا.

ادھر سربراہ پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے میرہزابجارنی کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے حکومت سے واقعہ کی شفات تحقیقات کرنے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے. شہلا رضا، نوید قمر اور نفیسہ شاہ کی جانب سے بھی واقعہ اظہار افسوس کیا ہے۔

تفتیشی افسران اور فرانزک ٹیم نے مقتول کے گھر کا دورہ کرکے تفتیش شروع کر دی ہے. کشمنر کراچی کی جانب سے اہل محلہ کا فائرنگ کی آواز سننے کا دعویٰ بھی سامنے آیا ہے

کراچی: صوبائی وزیرمیرہزارخان بجارانی اوراہلیہ کی گھرسےلاشیں برآمد

پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما منظور وسان نے خودکشی کے امکان کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرہزارخان بجارانی شفیق انسان تھے، وہ خودکشی نہیں کرسکتے، پولیس واقعےکی تحقیقات کررہی ہے. دونوں لاشیں اسپتال منتقل کر دی گئی ہیں۔

دوسری جانب میرہزاربجارانی کے قتل کے خلاف کشمور میں‌ قومی شاہراہ پر احتجاج جاری ہے. مظاہرین نےٹائرجلا کر قومی شاہراہ بلاک کردی ہے.

مقتول کے گھر تعزیت کے لیے پارٹی کی اعلیٰ قیادت کی آمد کا سلسلہ جاری ہے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں