The news is by your side.

Advertisement

نواب شاہ اور کندھ کوٹ میں بھی پیپلز پارٹی کے امیدوار عوام کے نرغے میں آگئے

کشمور: سندھ کے ضلع کشمور کے شہر کندھ کوٹ میں بھی پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار عوام کے نرغے میں آگئے، عوام نے امیدواروں کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق کندھ کوٹ سے قومی اسمبلی کے حلقے 197 سے انتخابات کے لیے کھڑے ہونے والے امیدوار احسان الرحمان اور صوبائی حلقے پی ایس 4 سے امیدوار عبد الرؤف کو ووٹ مانگنا مہنگا پڑ گیا۔

پیپلز پارٹی کے امیدوار احسان الرحمان اور عبد الرؤف اپنے انتخابی حلقے کا دورہ کر رہے تھے، عوام سے ووٹ مانگنا ان کے لیے مہنگا پڑ گیا، لوگوں نے ہاتھ پکڑ پکڑ کر سوال کرنے شروع کر دیے۔

علاقہ مکینوں نے امیدواروں کو گھیر کر سوالات کی بوچھاڑ کردی، اقتدار میں آکرعلاقے کے لیے کیا سہولتیں فراہم کیں، اپنے علاقے کی بہتری کے لیے کیا کیا؟

اپنے انتخابی حلقے کے لوگوں کے سوالات پر پی پی کے امیدوار گھبرا گئے، صوبائی اسمبلی کے امیدوار عبد الرؤف کھوسہ نے علاقہ مکینوں کے سامنے ہاتھ جوڑ لیے۔

علاقہ مکینوں نے امیدواروں کو آڑے ہاتھوں لے کر سوال کیے کہ یہاں نہ بجلی ہے نہ ہی روڈ بنائے گئے ہیں، نہ ہی عوام کے لیے نوکریاں دستیاب ہیں، پھر بھی ووٹ مانگنے آگئے۔

پیپلز پارٹی کے امیدواروں کو علاقہ مکینوں نے گھیر کر کہا کہ آپ یہاں ووٹ مانگنے آگئے ہیں اور جب ہم آپ کے بنگلے پر کسی مسئلے کے لیے آتے ہیں تو منشی دھکے دے کر بھگا دیتے ہیں۔

نواب شاہ


این اے 214 نواب شاہ سے بھی پیپلز پارٹی کےامیدوار کو اپنے حلقے میں ووٹ مانگنے کے لیے جانا مہنگا پڑگیا، ووٹرز نے سید غلام مصطفیٰ شاہ کو گھیر لیا۔

پیپلز پارٹی کے امیدوار سید غلام مصطفیٰ شاہ پر ووٹرز نے سوالات کی بوچھاڑ کر دی، عوام کے سامنے کبھی خود کو جواب دہ نہ سمجھنے والے بری طرح گھبرا گئے۔

لیاری میں بلاول بھٹو کے قافلے پر پتھراؤ، مظاہرین نے پیپلز پارٹی کا جھنڈا جلا دیا


ووٹر نے سوال کیا کہ آپ ہمارے ووٹوں سے دو بار قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے، لیکن ایک بار بھی علاقے میں دکھائی نہیں دیئے، آپ علاقے میں کیوں نہیں آئے؟

ووٹرز کے سامنے بے بس ہونے والے امیدوار سید غلام مصطفیٰ شاہ کو ہاتھ جوڑنے پڑ گئے، پی پی امیدوار ووٹرز سے معافیاں مانگتے رہے۔

واضح رہے کہ آج لیاری میں بلاول بھٹو زرداری کی ریلی پر بھی لیاری کے مکینوں نے احتجاج کرتے ہوئے شدید پتھراؤ کردیا تھا، مشتعل مظاہرین کا کہنا تھا کہ لیاری کو ایک عرصے سے پانی سے محروم رکھا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں