نواز شریف کی مسئلہ کشمیر کودبانے کی کوشش ہم نے ناکام بنائی ، بلاول -
The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کی مسئلہ کشمیر کودبانے کی کوشش ہم نے ناکام بنائی ، بلاول

کراچی : پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہمارے کشمیر میں انتخابی مہم سے مسئلہ کشمیر ابھر کر سامنے آیااورمودی سے دوستی کی وجہ سے نواز شریف کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر سرد خانے حوالے کرنے کی کوششوں کو ناکام بنایا۔

بلاول ہاوٴس میں آزاد کشمیر انتخابات کے پارٹی امیدواروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہعئے پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ یہ معمول کے انتخابات نہیں تھے اور ہم جانتے تھے کہ یہ انتخابات ہائی جیک کرنے کے لیے تمام ہتھکنڈے سر عام استعمال کیے جائیں گے لیکن ہم نے انتخابات لڑنے کا فیصلہ کیا اور تاریخ کے درست رخ پر رہے اور کشمیری عوام کے مقدس مقاصد کے لیے بہادری سے لڑے۔

ان کا کہنا تھا کہ پارٹی نے کشمیری عوام کے عظیم مفادات میں آزاد جموں و کشمیر میں انتخابات لڑے کیونکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر نوازلیگ حکومت کی خاموشی کی وجہ سے مقبوضہ وادی کے عوام کے مفادات کو نقصان ہو رہا تھا، ہمارے کشمیر میں انتخابی مہم سے مسئلہ کشمیر ابھر کر سامنے آیا ہے مودی سے دوستی کی وجہ سے نواز شریف کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر سرد خانے حوالے کرنے کی کوششوں کو ناکام بنایا۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح قبل از انتخابات دھاندلی، کشمیر کونسل کے فنڈز کا بے دریغ استعمال اور وفاقی وزراء کی مداخلت کی وجہ سے ہمیں پتا تھا کہ نتائج کیا آئیں گے لیکن مجھے فخر ہے کہ ہمارے ساتھی ہمیں چھوڑ کر نہیں گئے۔

پاکستان پیپلزپارٹی آزاد کشمیر کے رہنماوٴں نے کہا کہ نواز لیگ حکومت نے انتقامی کارروایاں شروع کر دی ہیں اور کابینہ کی تقرری سے قبل ہی پیپلزپارٹی کے رہنماوٴں پر جھوٹے مقدمات قائم کیے گئے، یہ عمل نئی آزاد کشمیر حکومت کے مکروہ چہرے کی عکاسی کرتا ہے۔

اس موقع پر بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وہ آزاد کشمیر انتخابات کے نتائج سے مایوس نہیں ہیں اور انہیں پختہ یقین ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی ملک میں 2018کے عام انتخابات جیتے گی،اجلاس میں پاکستان پیپلزپارٹی خواتین ونگ کی صدر ایم این اے فریال تالپر،پیپلزپارٹی آزاد کشمیر کے رہنماوٴں سابق وزیراعظم چودھری عبدالمجید،چودھری محمد یاسین، لطیف اکبر، سید بازل علی نقوی اور دیگر شریک تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں