The news is by your side.

Advertisement

عثمان بزدار سے ملاقات، ن لیگ ارکان اسمبلی کو شوکاز نوٹس، پیپلزپارٹی ایم پی اے لوٹا قرار

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرنے پر پیپلزپارٹی نے اپنے ہی رکن پنجاب اسمبلی غضنفر لنگاہ کو لوٹا قرار دے دیا، مسلم لیگ ن نے بھی اپنے ارکان اسمبلی کو شوکاز نوٹس جاری کردئیے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق پیپلزپارٹی نے اپنے رہی رکن پنجاب اسمبلی کو غضنفر لنگاہ کو لوٹا قرار دے دیا، پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن کے ارکان اسمبلی نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کی تھی۔

پیپلزپارٹی کے پارلیمانی لیڈر پنجاب حسن مرتضیٰ نے غضنفر لنگاہ کا اسمبلی میں گھیراؤ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ غضنفر لنگاہ اب ایوان میں نہیں بیٹھ سکیں گے۔

واضح رہے کہ ارکان پنجاب اسمبلی کی وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کے بعد مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی میں کھلبلی مچ گئی ہے، ن لیگ نے ملاقات کرنے والوں کو شوکاز نوٹس جاری کردیا۔

مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی نشاط ڈاہا نے کہا کہ حلقے کے مسائل پر بات کرنے کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے پاس گئے تھے اس کے لیے پارٹی کی اجازت کی ضرورت نہیں تھی۔

رکن اسمبلی نشاط ڈاہا نے شوکاز نوٹس کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے کہا کہ آئندہ بھی حلقے کے مسائل کے لیے عثمان بزدار سے ملاقات کے لیے جانا پڑا تو وہ جائیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس معاملے پر ن لیگ پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ نے حمزہ شہباز سے ملاقات کی جس میں تنظیم سازی اور لیگی ارکان کی عثمان بزدار سے ملاقات پر بات چیت کی گئی اور ملاقات کرنے والوں کے خلاف کارروائی پر مشاورت کی گئی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں