منی لانڈرنگ کیس میں آصف زرداری، فریال تالپور ملزمان نہیں، لطیف کھوسہ -
The news is by your side.

Advertisement

منی لانڈرنگ کیس میں آصف زرداری، فریال تالپور ملزمان نہیں، لطیف کھوسہ

لاہور: سابق گورنر پنجاب لطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ منی لانڈرنگ کیس کی ایف آئی آر میں آصف زرداری اور فریال تالپور ملزمان نہیں ہیں۔

وہ اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں گفتگو کر رہے تھے، انھوں نے کہا ’منی لانڈرنگ کا کیس 2015 میں شروع ہوا جب کہ آصف زرداری نے 2008 میں زرداری گروپ سے استعفیٰ دے دیا تھا۔‘

سردار لطیف احمد خان کھوسہ کا کہنا تھا کہ مقدمے میں آصف زرداری کا انور مجید کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے، انھوں نے خود کہا ہے کہ صدر بننے سے پہلے وہ کمپنی سے مستعفی ہو گئے تھے۔

پیپلز پارٹی کے رہنما نے کہا ’ایف آئی اے سے کہا ہمیں سوال نامہ دیں، ایف آئی اے والوں نے کہا سوال نامہ بنا کر بھیج دیں گے، جب سوال نامہ ملے گا تو ہم سوالوں کا جواب دے دیں گے، فی الوقت ایک طرح سے تو ایف آئی اے والوں نے آصف زرداری کو استثنیٰ دے دیا ہے، فریال تالپور نے کہا اب جو بھی پوچھنا ہے مجھ سے پوچھیے گا۔‘


جعلی اکاؤنٹس کیس: آصف علی زرداری اور فریال تالپور ایف آئی اے میں پیش


لطیف کھوسہ کا کہنا تھا کہ قوم کی لوٹی ہوئی دولت واپس آنی چاہیے، ملک سے پیسہ باہر جانے سے ہی معیشت خراب ہوئی ہے، اس سلسلے میں بیرون ممالک کے ساتھ دو طرفہ معاہدے اور منی لانڈرنگ کو روکنے کے لیے اقدامات کرنے ہوں گے۔

پی پی رہنما نے کہا کہ مفرور ملزم اسحاق ڈار لندن میں آزاد گھوم رہا ہے، نواز شریف کے بچے بھی لندن کے انہیں فلیٹس میں رہتے ہیں جن پر کیس چلا، انھیں پاکستان واپس کیوں نہیں لایا جاتا، المیہ یہی ہے کہ باتیں تو بہت کی جاتی ہیں لیکن عمل درآمد نہیں کیا جاتا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں