The news is by your side.

Advertisement

بجٹ منظوری کیلئے قومی خزانے کو بطور سیاسی رشوت استعمال کیاگیا، نیئر بخاری

کراچی : پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل نیئر بخاری نے کہا پی پی غیر ملکی اشاروں پر بنے بجٹ کو ملک کیلئے خطرہ سمجھتی ہے، بجٹ منظوری کیلئے قومی خزانے کو بطور سیاسی رشوت استعمال کیا گیا، حکومت نے اتحادی جماعتوں سے خفیہ اور اعلانیہ مک مکا کیا۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل نیئر بخاری نے اپنے بیان میں کہا پی پی غیر ملکی اشاروں پر بنے بجٹ کو ملک کیلئےخطرہ سمجھتی ہے، حکومتی بجٹ ہارس ٹریڈنگ اور مک مکا پر مبنی ہے۔

سیکٹریٹری جنرل پی پی کا کہنا تھا بجٹ منظوری کیلئے قومی خزانے کوبطورسیاسی رشوت استعمال کیاگیا، حکومت نےاتحادی جماعتوں سے خفیہ اور اعلانیہ مک مکا کیا، آصف زرداری ،شہبازشریف کی میثاق معیشت تجویزپردھیان نہیں دیاگیا۔

نیئر بخاری نے مزید کہا تین ووٹوں کےسہارےکھڑی حکومت ہلکی جنبش پرزمین بوس ہو سکتی ہے۔

مزید پڑھیں : بلاول بھٹو کی عوامی رابطہ مہم حکمرانوں کے ہوش اڑا دے گی، نیئر بخاری

یاد رہے دو روز قبل نیئر بخاری نے میڈیا سے گفتگو میں کہا تھا کامیاب اے پی سی نے سیاست کا رخ متعین کر دیا ہے، کامیاب اور اہم فیصلوں کے بعد حکمران جماعت پریشانی میں ہے، ملک کے لیےخطرہ بننے والے حکمرانوں کے دن گنے جا چکےہیں۔

نیئر بخاری کا کہنا تھا بلاول بھٹو کی عوامی رابطہ مہم حکمرانوں کے ہوش اڑا دے گی، عوام کو مصائب میں مبتلا کرنے والے کامیابی پر واویلا کر رہے ہیں، آئینی جمہوری انسانی معاشی حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والوں کی راہ روکیں گے۔

خیال رہے قومی اسمبلی نے آئندہ مالی سال کے بجٹ کی باقاعدہ منظوری دے دی ہے ، بجٹ کا مجموعی حجم آٹھ ہزار دو سو اڑتیس ارب روپے ہے جبکہ اپوزیشن کی تمام ترامیم کثرت رائے سے مسترد ہوگئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں