کالا باغ ڈیم کی بات کرنے والے پر آرٹیکل 6 لگنا چاہیے، ناصر حسین شاہ -
The news is by your side.

Advertisement

کالا باغ ڈیم کی بات کرنے والے پر آرٹیکل 6 لگنا چاہیے، ناصر حسین شاہ

کراچی: پیپلزپارٹی کے رہنما  ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کالا باغ ڈیم کی بات کرنے والوں پر آرٹیکل 6 لگنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی کے پروگرام اعتراض ہے میں گفتگو کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ ہماری جماعت ڈیم بنانے کی مخالف نہیں البتہ کالا باغ ڈیم کی تعمیر کسی صورت نہیں ہونے دیں گے۔

ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ پاکستان پیپلزپارٹی دیامر بھاشا اور مہمند ڈیم کی مکمل حمایت اور اپنے تعاون کا یقین دلاتی ہے مگر ہم کالا باغ ڈیم جو مردہ گھوڑاہے اُس کے خلاف ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ آخر متنازع چیزکوکیوں سامنےلایاجارہا ہے؟

اُن کا کہناتھا کہ چیف جسٹس کےڈیم بنانےکے احسن اقدام کی حمایت کرتےہیں۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ رجسٹری لاہور میں منرل واٹر کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے تھے کہ ڈیموں کی تعمیر روکنے اور مخالفت کرنے والوں کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی ہوگی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار کا اپنے ریمارکس میں کہنا تھا کہ ریٹائرمنٹ کےبعدمجھےکسی عہدے کی پیش کش کر کے شرمندہ نہ ہوں، میں نے آرٹیکل چھ کے قانون کا مطالعہ شروع کردیا، ڈیم کو روکنے کی کوشش کرنے پر آرٹیکل چھ کے تحت کارروائی کروں گا۔

مزید پڑھیں: کالا باغ ڈیم پاکستان کی بقاء کا ضامن ہے، اتفاق رائے سے بنائیں گے، چیف جسٹس

بعد ازاں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کالا باغ ڈیم پاکستان کی بقاء کا ضامن ہے اگر قوم متحد رہی تو یہ بھی تعمیر کر کے دکھائیں گے۔

اُن کا کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں پانی کی شدید قلت ہوگی جبکہ پانی کی قلت سے بچنے کا واحد حل ڈیمز کی تعمیر ہے، ڈیموں کی تعمیر میں شہری بڑھ چڑھ کر حصہ لے  رہے ہیں اور اب یہ ایک تحریک کی صورت اختیار کرگئی۔

یہ بھی پڑھیں: چیف جسٹس کا ڈیم کے مخالفین پرآرٹیکل 6 کے تحت کارروائی کا اعلان

جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ جو دشمن عناصر  اس تاک میں بیٹھے ہیں کہ اس ڈیم کو نہ بننے دیا جائے اگر وہ اپنی کوشش میں کامیاب ہوگئے تو بہت دکھ اور افسوس کی بات ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں