پیپلز پارٹی نے اقوامِ متحدہ میں وزیرِ خارجہ کے اردو میں خطاب کو مسترد کر دیا -
The news is by your side.

Advertisement

پیپلز پارٹی نے اقوامِ متحدہ میں وزیرِ خارجہ کے اردو میں خطاب کو مسترد کر دیا

کراچی: بلاول بھٹو زرداری کی زیرِ صدارت پاکستان پیپلز پارٹی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس منعقد ہوا، اجلاس میں اقوامِ متحدہ میں وزیرِ خارجہ کے اردو میں خطاب کو مسترد کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی نے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شاہ محمود قریشی کے خطاب کو اس لیے مسترد کر دیا ہے کیوں کہ وہ اردو میں کیا گیا۔

اپوزیشن کو پی اے سی کی چیئرمین شپ نہ ملنے پر ایوان میں احتجاج کیا جائے گا: پیپلز پارٹی

پیپلز پارٹی نے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں خطاب پر اعتراض اٹھا دیا ہے کہ خطاب اردو میں کیوں کیا گیا، عالمی فورم پر انگریزی میں خطاب سے پاکستان کے مؤقف کا دنیا کو پتا چلتا۔

پی پی پارلیمانی پارٹی نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کا خطاب پاکستانی قوم سے نہیں بلکہ اقوامِ عالم سے خطاب تھا، وہ دنیا سے مخاطب ہو رہے تھے۔

بلاول بھٹو زرداری کی زیرِ صدارت منعقد ہونے والی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں یہ بھی مطالبہ کیا گیا کہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ اپوزیشن کو دی جائے۔

پاکستان پیپلز پارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ اپوزیشن کو پی اے سی کی چیئرمین شپ نہ ملنے پر ایوان میں احتجاج کیا جائے گا۔


یہ بھی پڑھیں:  وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس سے اردو میں تاریخی خطاب


پی پی کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں متعدد دیگر ملکی معاملات پر بھی غور کیا گیا، پی پی نے فیصلہ کیا کہ حکومتی بجٹ، گیس اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا معاملہ اسمبلی میں اٹھایا جائے گا۔

خیال رہے کہ 29 ستمبر کو وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اکہتر ویں اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے اپنی قومی زبان اردو کو اہمیت دی اور اس تاثر کو ختم کیا کہ پاکستانی رہنما عالمی فورمز پر اپنی زبان میں بات کرنے احساسِ کم تری کی وجہ سے کتراتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں