The news is by your side.

Advertisement

بالوں کی سفیدی روکنے کا آسان علاج اور مفید مشورے

انسان کے بال عموماً 35 سال کی عمر کے بعد تقریباً سفید ہونا شروع ہوجاتے ہیں لیکن اس کا آغاز نوجوانی میں بھی ممکن ہے آج کل ان مسائل میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

بالوں کے سفید ہونے کی اہم علامت یہ ہے کہ بالوں کو باقاعدہ نشوونما کا موقع نہیں ملتا،35 سال کی عمر سے پہلے بالوں کاسفید ہوجانا قبل از وقت کہلاتا ہے، یہ انقلابی تبدیلی تیزی سے آتی ہے لیکن بے شک راتوں رات نہیں ہوتی۔

اس حوالے سے اے آر وائی ڈیجیٹل کے پروگرام گڈ مارننگ پاکستان میں ڈاکٹر بتول اشرف ناظرین کو اپنے مفید مشوروں سے آگاہ کیا اور سفید بالوں کے علاج کیلئے سستا اور آسان طریقہ بیان کیا۔

ڈاکٹر بتول اشرف نے بتایا کہ بالوں کی سفیدی روکنے کیلئے زنک کا ستعمال بہت ضروری ہے یہ زنک ہمیں مچھلی آم آلوچے سے وافر مقدار میں ملتا ہے، اس کے علاوہ بیر میں بھی زنک کی کافی مقدار ہوتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ چھوٹے بچوں کے بال اگر سفید ہونے لگیں تو انہیں زنک کا سیرپ پلانا چاہیے، دس سال سے زائد عمر کے بچوں کو دن میں ایک بار ایک چائے کا چمچ پلاسکتے ہیں۔

اس کے علاوہ ڈاکٹر بتول اشرف نے سفید بالوں کو کالا کرنے کیلئے تیل بنانے کا نسخہ بھی بتایا۔

تیل بنانے کا طریقہ:

آدھا گلاس پانی میں دس نیم کے پتے اچھی طرح گرم کرلیں اس کے بعد لیونڈر آئل کے پانچ قطرے ڈال لیں، اگر یہ نہ ملے تو بادام کا تیل بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

اس کے بعد روز میری کے دو چمچ اس میں اور شامل کرلیں اور چار یا پانچ چھوٹی الائچی کے دانے اور 25 سے 30عدد لونگ ڈالیں اس کے ساتھ تیز پات کے چند پتے بھی ڈال لیں۔

جب پانی میں ابال آجائے تو سوتی کپڑے سے اس پانی کو چھان لیں اور اس پکڑے کی پوٹلی بنا کر اسی پانی میں ہلکا سا ڈبوئیں اور بالوں کی جڑ سے لے کر نوک تک لگائیں۔

انہوں نے بتایا کہ تیل لگانے کے زیادہ سے زیادہ 24 گھنٹے بعد نہا سکتے ہیں، یہ عمل تین مہینے تک کریں، اس نسخے کو بچے اور بڑے سب استعمال کرسکتے ہیں۔

ماہرین صحت کے مطابق صحت مند بالوں کے لیے وٹامن ای لازمی ہے مگر چینی اس وٹامن کے جذب ہونے کے عمل کو روک دیتی ہے، اس لیے بال سفید ہونا شروع ہوجاتے ہیں، چینی کا استعمال کم کرکے بالوں کو سفید ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں