The news is by your side.

Advertisement

فرانس پاکستان کی لبرل سرمایہ کاری پالیسیوں سے استفادہ کر سکتا ہے: عارف علوی

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان فرانس کے ساتھ دو طرفہ تعلقات بڑھانے کا خواہاں ہے، پاکستان فرانسیسی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق صدر مملکت عارف علوی نے چیئرمین پاک فرانس بزنس کونسل تھیری فلملن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان فرانس کے ساتھ دو طرفہ تعلقات بڑھانے، باہمی مفاد میں تجارت و سرمایہ کاری کے شعبوں میں تعاون کا خواہاں ہے۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ حکومت نجی شعبے کو ہر مرحلے پر سہولت فراہم کرنے کے لیے پر عزم ہے، پاکستان فرانسیسی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ فرانس کے سرمایہ کار پاکستان کی لبرل سرمایہ کاری پالیسیوں سے استفادہ کر سکتے ہیں، پاکستان میں سرمایہ کاری کی پالیسی سرمایہ کاروں کے لیے بڑی پرکشش ہے۔

آج پیر کو میڈف (ایم ای ڈی ای ایف) انٹرنیشنل کی پاک فرانس بزنس کونسل کے چیئرمین اور ٹوٹل گلوبل سروسز کے صدر تھیری فلملن نے وفد کے ہم راہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے ملاقات کی۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیر اعظم عمران خان سے فرانسیسی کاروباری افراد کی تنظیم کے وفد کی ملاقات

ملاقات میں سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین ہارون شریف اور پاکستان میں فرانس کے سفیر مارچ بارٹے بھی موجود تھے، اس موقع پر صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان فرانس کے ساتھ اپنے تعلقات کو بے حد اہمیت دیتا ہے۔

انھوں نے کہا ’پاکستان بالخصوص مینوفیکچرنگ، تعمیرات، سیاحت، مواصلات اور روڈ انفرا اسٹرکچر کے شعبوں میں فرانس کے سرمایہ کاروں کے لیے سرمایہ کاری کے مختلف مواقع کی پیش کش کرتا ہے۔‘

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ غیر ملکی کمپنیوں کو مقامی اور غیر ملکی بینکوں سے قرضے لینے کی سہولت بھی حاصل ہے، توانائی، سڑکوں، ریلوے کے نیٹ ورک، سافٹ ویئر ڈویلپمنٹ اور دوسرے بہت سے شعبوں میں سی پیک کے منصوبے فرانسیسی کمپنیوں کے لیے بہت سے مواقع کے حامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں 7 خصوصی اقتصادی زونز قائم کیے گئے ہیں اور فرانسیسی کمپنیاں ان زونز میں اپنے صنعتی یونٹ قائم اور منتقل کر سکتی ہیں۔ فرانسیسی کمپنیوں کو دعوت دیتا ہوں کہ وہ آگے آئیں اور مقامی و غیر ملکی کمپنیوں کے اشتراک سے کام کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں