site
stats
پاکستان

کرپشن ایک عالمی مسئلہ ہے، صدر ممنون حسین

اسلام آباد : صدر ممنون حسین نے کہا ہے کہ ہر قسم کے دباو کو بالائے طاق رکھتے ہوئے بدعنوانی کے خاتمے کے لیے کام کرنا ضروری ہے کیونکہ کرپشن ایک عالمی مسئلہ ہے جس پر تمام ممالک کو مل کر حکمت عملی بنانا ہوگی۔

صدر مملکت نے ایوان صدر میں جنوبی ایشیائی ممالک کی تنظیم ‘سارک’ کے مندوبین سے گفتگو کے دوران کہا کہ کرپشن ایک عالمی مسئلہ ہے جس پر تمام ممالک کو مل کر حکمت عملی بنانا ہوگی، سیمینار میں بھوٹان ، بھارت ، مالدیپ، نیپال اور سری لنکا کے علاوہ دیگر رکن ممالک کے مندوبین بھی شریک تھے، یہ وفد قومی احتساب بیورو (نیب ) کے زیر اہتمام کرپشن کے خاتمے کے لیے منعقدہ کیے جانے والے سیمینار میں شرکت کے لیے پاکستان کے دورے پر ہے ۔

ملاقات میں چیئرمین قومی احتساب بیورو قمر زمان چوہدری اور اعلی حکام نے بھی شرکت کی۔

صدر نے کہا کہ جنوبی ایشیائی خطہ اقتصادی صلاحیت اور وسائل کے اعتبار سے ایک اہم خطہ ہے، ترقی پزیر ممالک میں بد عنوانی کی وجہ سے وسائل کا ضیاع تشویشناک ہے، غربت کے خاتمے اور سارک ممالک کے عوام کی ترقی کے لیے بدعنوانی کا خاتمہ انتہائی ضروری ہے۔

صدر ممنون حسین نے کہا کہ بدعنوان عناصر کو ضرور پکڑا جائے لیکن ان کے خلاف کیے جانے والے اقدامات کے دوران اختیارات کا استعمال احتیاط سے کیا جائے تاکہ بے قصور لوگ نشانہ بننے سے محفوظ رہیں، سارک ممالک کو بدعنوانی کے خاتمے کے لیے اپنے اپنے تجربات میں ایک دوسرے کو شریک کرنا چاہیے تاکہ بدعنوان عناصرکو جلد پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لیے کیے جانے والے اقدامات میں تیزی آسکے۔

صدر مملکت نے کہا کہ عالمی برادری اپنے وسائل کو بچانے کے لیے بدعنوانی کے خاتمے پر یکسو ہے اور اس میں کسی قسم کی کوئی رعایت نہیں دی جائے گی۔

انھوں نے کہا کہ حکومت ملک میں کرپشن کے خاتمے کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے، اس سلسلے میں بلاامتیاز کاروائی کی جا
رہی ہے کیونکہ پاکستانی حکومت کرپشن کے خاتمے کے لیے سنجیدہ ہے، حکومت کی بہتر معاشی پالیسیوں کی وجہ سے عالمی اداروں نے پاکستان کے اقدامات کو سراہا ہے، حکومتی اداروں میں کرپشن کے خاتمے اور شفافیت لانے کے لیے حکومت نے اہم اقدامات کیے ہیں۔

صدر مملکت نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان ایشائی ممالک کے ساتھ معاشی اور معاشرتی مضبوطی کے لیے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا، سارک ممالک میں بد عنوانی کے خاتمے کے لیے رکن ممالک کا سیمینار وقت کی اہم ضرورت ہے۔

وفد نے صدر مملکت کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ وہ پاکستان سے تعلقات کو بڑی قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اورخطے میں امن کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top