The news is by your side.

Advertisement

پریانتھاکمارا قتل کیس : 88 ملزمان کی سزائیں بڑھانے کے لیے ہائی کورٹ سے رجوع کرنے پر غور

لاہور: پراسیکیوٹر جنرل سری لنکن شہری پریانتھاکمارا کے قتل کیس میں 88 ملزمان کی سزائیں بڑھانے کے لیے ہائی کورٹ سے رجوع کرنے پر غور کررہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکن شہری پریانتھاکمارا کے قتل کیس میں 88 ملزمان کو سزائیں سنادی گئی ، ذرائع کا کہنا ہے کہ پراسیکیوٹر جنرل نے سزائیں بڑھانے کے لیے ہائیکورٹ سے رجوع کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔

پراسیکیوٹر جنرل رانا عارف کمال نون کی سزاؤں پر پراسکیوشن ٹیم سے مشاورت جاری ہے، پراسیکیوٹر جنرل ملزمان کی سزا اور جرمانے بڑھانے کے لئے اپیل دائر کریں گے۔

ذرائع نے بتایا کہ ملزم بلال کی بریت کو بھی چیلنج کیا جائے گا۔

یاد رہے گذشتہ روز سری لنکن شہری پریانتھاکمارا کے قتل میں گواہان اور فریقین کے دلائل سننے کے بعد انسداددہشت گردی عدالت نے کیس کا فیصلہ سنایا تھا۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 6 ملزمان کو سزائے موت، 9 ملزمان کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال دسمبر میں سیالکوٹ وزیرآباد روڈ پر واقع نجی فیکٹری کے سری لنکن جنرل مینیجر پریانتھا کمارا فیکٹری ملازمین نے توہین مذہب کا الزام لگا کر بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا کر ہلاک کیا اور پھر لاش کو چوک پر نذر آتش کردیا تھا۔

بعد ازاں پولیس نے کیس میں متعدد ملزام کو گرفتار کیا اور ابتدائی چالان میں 85 ملزمان کونامزد کیا جبکہ 10 سے 12 مرکزی ملزمان قرار دیئے گئے تھے ، مرکزی ملزمان میں متعدد فیکٹری کے ملازمین شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں