The news is by your side.

Advertisement

اسلحہ برآمدگی کیس:‌ پروفیسر ڈاکٹر ریاض جیل سے رہا

کراچی: جامعہ کراچی کے پروفیسر ڈاکٹر ریاض کو عدالت سے ضمانت ملنے کے بعد جیل سے رہا کردیا گیا، انہیں یکم اپریل کو کراچی پریس کلب کے باہر سے گرفتار کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق یکم اپریل کو گرفتار پروفیسر حسن ظفر عارف کی رہائی اور انہیں طبی سہولیات فراہم کرنے کے لیے پریس کانفرنس کے لیے آنے والے جامعہ کراچی اساتذہ تنظیم کے رہنما کو فوارہ چوک کے قریب سے رینجرز نے خاتون اساتذہ سمیت گرفتار کیا تھا۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں نے پریس کانفرنس کے لیے آنے والے ڈاکٹر ریاض اور خاتون ٹیچر مہرافروز مراد کو پریس کلب کے قریب فوارہ چوک جبکہ ایک اور خاتون خاتون ٹیچر نغمہ شیخ کو پاسپورٹ آفس کے قریب سے حراست میں لیا تھا، ذرائع کے مطابق تینوں رہنماؤں کو لندن سے رابطہ رکھنے کی وجہ سے حراست میں لیا گیا تھا۔

پڑھیں: ’’ پروفیسر ڈاکٹر ریاض کے خلاف غیر قانونی اسلحے کا مقدمہ درج ‘‘

ابتدائی تفتیش کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں نے دونوں خواتین اساتذہ کو رہا کردیا تھا جبکہ آج پرفیسر ڈاکٹر ریاض کے خلاف رینجرز کی مدعیت غیر قانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ درج کرکے انہیں پولیس کے حوالے کردیا گیا تھا۔

غیر قانونی اسلحہ برآمدگی کی ایف آئی آر درج ہونے کے بعد پروفیسر ڈاکٹر ریاض کو جیل منتقل کردیا گیا تھا تاہم آج صبح انہیں عدالت لایا گیا جہاں جج نے اُن کی ضمانت منظور کی۔ عدالت سے ضمانت منظور ہونے کے بعد پروفیسر ڈاکٹر ریاض کو جیل سے رہا کردیا گیا۔

مزید پڑھیں: ’’ پروفیسر حسن کی رہائی: پریس کلب آنے والے 3 اساتذہ گرفتار، 2 خواتین شامل ‘‘

اساتذہ کی جانب سے بے گناہ پروفیسر کی گرفتار ی کے خلاف جامعہ کراچی سمیت ملک کی مختلف جامعات میں تدریسی نظام معطل رہا جبکہ آج کراچی یونیورسٹی میں احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں