The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں اساتذہ کی بھرتیوں پر حکم امتناعی ختم

سندھ ہائی کورٹ سکھر بینچ نے سندھ بھر میں جونیئر اسکول ٹیچرز کی بھرتیوں پر حکم امتناعی ختم کردیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سندھ ہائیکورٹ سکھر بینچ نے سندھ بھر میں جونیئر اسکول ٹیچرز کی بھرتیوں کیخلاف حکم امتناعی ختم کرتے ہوئے پرائمری اساتذہ کی پٹیشن خارج کردی ہے اور جے ایس ٹی کی آسامیوں پرمیرٹ پربھرتیوں کاعمل جاری رکھنے کا حکم جاری کیا ہے۔

سندھ ہائیکورٹ سکھر بینچ کے جسٹس محمد جنید غفار اور جسٹس ذوالفقار علی سانگی پر مشتمل دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی اس موقع پر پراسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل علی رضابلوچ نےسندھ حکومت کی رپورٹ پیش کی جس میں کہا گیا کہ جے ایس ٹی جدید سائنسی بنیادوں کےتحت بھرتی کیے جارہے ہیں، سماعت پر فریقین کے وکلا نے دلائل بھی دیے۔

عدالت نے پرائمری اساتذہ کی پٹیشن خارج کرکے ٹیچرز کی بھرتیوں کیخلاف حکم امتناعی ختم کردیا اور فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ آئی بی اےٹیسٹ پاس امیدوارجےایس ٹی کی آسامیوں پر بھرتی ہوں گے اور سندھ بھر میں 19 ہزار جونیئر اسکول ٹیچرز بھرتی ہونگے۔

عدالت نے ساتھ ہی پرائمری اساتذہ کو جے ایس ٹی پر پروموٹ کرنے کا حکم بھی دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں