The news is by your side.

Advertisement

ڈیموں،پن بجلی منصوبوں کیلئے 177 ارب سے زائد کی رقم مختص کرنے کی تجویز

اسلام آباد : وفاقی حکومت نے آبی وسائل کے فروغ کےلیے قومی خزانے سے 164 ارب روپے اور بیرونی ذرائع سے 13 ارب 50 کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز دے دی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکام کا کہنا ہے کہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں آبی وسائل کا فروغ حکومت کی اہم ترجیح ہے، وفاقی حکام نے تجویز دی ہے کہ ڈیموں، پن بجلی منصوبوں کےلیے 177 ارب 51 کروڑ کے فنڈز مختص کیے جائیں۔

تجویز میں کہا گیا ہے کہ دریائے سندھ پر داسو پن بجلی گھر منصوبے کی تعمیر کےلئے 80 ارب کے فنڈز مختص کیے جائیں، ذرائع کا کہنا ہے کہ داسو منصوبے کےلیے مختص فنڈز کسی بھی ایک منصوبے کےلیے سب سے زیادہ رقم ہے۔

داسو پن بجلی گھر منصوبے کے پہلے مرحلے کیلئے عالمی بینک نے 2017 میں قرض کی منظوری دی تھی لیکن داسوپن بجلی گھر کےلیے اراضیئ کے حصول میں مشکلات کے باعث منصوبے التوا کا شکار تھا۔

وفاقی حکام کی جانب سے دیامیر بھاشا ڈیم کی تعمیر کیلیے مجموعی طور پر 21 ارب روپے، نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے 14 ارب 7 کروڑ روپے، منگلا ڈیم کی پاور جنریشن کی اپ گریڈیشن کیلئے 5 ارب روپے کے فنڈز مختص کرنے کی تجویز گئی ہے۔

تجویز میں تربیلا ڈیم توسیع کے 2 منصوبوں کیلئے 8 ارب 90 کروڑ روپے کے فنڈز، مہمند ملٹی پریز ڈیم کےلیے سات ارب جبکہ بلوچستان میں کچھی کینال پروجیکٹ کےلیے دو ارب روپے مختص کرنے کا کہا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں