The news is by your side.

Advertisement

کاہنہ فلائی اوور کے متاثرین نے شہباز شریف کا راستہ روک لیا

لاہور: کاہنہ میں فلائی اوور کی تعمیر کے خلاف مقامی افراد نے شدید احتجاج کرتے ہوئے فلائی اوور کا افتتاح کر کے واپس آنے والے شہبازشریف کی گاڑی روک لی۔

تفصیلات کے مطابق کاہنہ میں وزیر اعلیٰ پنجاب ایک فلائی اوور کا افتتاح کرنے گئے تو لوگوں نے پہلے تو افتتاح کی جگہ کو گھیرنے کی کوشش لیکن انتظامیہ نے انہیں ایسا کرنے سے روک دیا جس پر وزیر اعلیٰ کے واپسی کے راستے میں کھڑے ہو گئے،اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے واپسی کے روٹ پر ان کی گاڑی روک کرفلائی اوور کی تعمیر کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ نے گاڑی سے باہر نکل کر مائیک سنبھالتے ہوئے خطاب کرنے کی کوشش کی لیکن عوام نے ان کی ایک نہ سنی اور شدید نعر ے بازی شروع کر دی،جس پر وزیر اعلیٰ دوبارہ گاڑی میں بیٹھ گئے اور واپسی کا قصد کیا جس کے بعد سکیورٹی حکام نے بڑی مشکل سے ان کی گاڑی کو نکالا۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہماے گھروں کو توڑ کر فلائی اوور بنایاجا رہا ہے جس سے مقامی گاﺅں اور قبرستان کا راستہ بند ہو گیا ہے، مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہمارے گھروں کو گرانے کے بعد نہ تو زمین کی قیمت دی گئی نہ ہی متبادل جگہ فراہم کی گئی۔

اس موقع پر مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ متبادل راستہ دینے کے ساتھ ان کے گھروں کے متبادل زمین دی جائے یا کم از کم اس قدر معاوضہ ضرور دیا جائے جس سے وہ اپنے گھر تعمیر کرسکیں۔

وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے اس صورتحال پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ ناقص پلاننگ پر ضرو ر نظر ثانی کی جائے گی اور حق دار کو اس کو حق دیا جائے گا،مقامی افارد کو تنگ کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا۔

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ شہباز شریف نے کاہنہ کے علاقہ سے ہی رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہو کر وزیر اعلیٰ کا حلف اٹھایا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں